عمر کے بارے میں طنزیہ پیغام پر حدیقہ کیانی کا جواب

Image caption حدیقہ کیانی کو پاکستان میں بدترین سیلاب کے بعد اقوامِ متحدہ نے اپنا خیر سگالی کا سفیر مقرر کیا تھا

پاکستانی گلوکارہ حدیقہ کیانی ہمیشہ سے اپنے گانوں اور فلاحی کاموں سے کسی نہ کسی قسم کی آگہی پھیلاتی رہی ہیں اور اس لیے انسٹاگرام پر ان کی وہ پوسٹ دیکھ کر حیرانی نہیں ہوئی جو انھوں نے ان کو بھیجے گئے ایک پیغام کے جواب میں لکھی ہے۔

کسی پر بھی اس کے رنگ، عمر، جنس، نسل یا مذہب کی وجہ سے رائے دینا یا تبصرہ کرنا کسی بھی مہذب معاشرے میں نازیبا سمجھا جاتا ہے لیکن جب لوگ آپ پر اس لیے جملے کسیں کہ آپ اکیلی ماں ہیں یا یہ کہیں کہ آپ کو یہ چیزیں نہیں کرنی چاہییں کیونکہ آپ فلاں عمر میں پہنچ چکے ہیں تو بات اور بدھی لگنے لگتی ہے۔

حدیقہ کیانی کے بارے میں مزید خبریں

’اس جملے کی معذرت تو شاید ہو سکے مگر‘

عامر ذکی اپنے آخری دنوں میں بیمار رہنے لگے تھے

’چائے پلائیں مگر جنگ نہ کریں‘

ایسا ہی ایک تبصرہ حدیقہ کیانی کی انسٹا گرام پر کسی نے لکھا اور ’بویے باریاں‘ کی گلوکارہ نے کم از کم اس کمنٹ لکھنے والی پر تو علم اور شعور کے تمام دروازے کھول دیے۔

تبصرہ یہ تھا کہ 'آنٹی اب تمہاری اللہ اللہ کرنے کی عمر ہے'۔

بظاہر یہ ایک سادہ سا تبصرہ ہے لیکن اس میں لکھنے والے یا والی کا طنز بھی صاف جھلکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ HADIQA KIANI INSTAGRAM
Image caption حدیقہ کیانی کا جواب

حدیقہ کیانی نے یہ تو سمجھا کہ اس کمنٹ لکھنے والی کو سمجھانا ضرور چاہیے لیکن اس کے ساتھ ساتھ انھوں نے شائستگی کا دامن بھی نہیں چھوڑا۔ انھوں نے نہایت مہذب انداز سے صارف کو بغیر اس کا نام لیے مخاطب کرتے ہوئے لکھا: 'بڑی بدقسمتی کی بات ہے کہ بڑی عمر کے حوالے سے کمنٹ ہمیشہ لڑکیوں کی طرف سے آتے ہیں۔ میں نے اس لڑکی کا نام نہیں دکھایا کیونکہ میں نہیں چاہتی کہ کوئی اسے 'بلی' یا ہراساں کرے۔ لیکن ہمیں اپنی بیٹیوں کی پرورش اچھے طریقے سے کرنی چاہیے تاکہ وہ اپنے آپ اور دوسری عورتوں سے محبت کریں۔'

انھوں نے اس صارف کے حوالے سے خواتین سے مخاطب ہو کر کہا کہ 'خواتین محتاط رہیں۔ آپ سب کو ایک دن بڑی عمر کو پہنچنا ہے۔ آپ سب کا وزن یا تو کبھی کچھ پاؤنڈ بڑھ جائے گا یا کم ہو جائے گا۔ چہرے پر کچھ سلوٹیں آ جائیں گی۔ اور آپ کی تمام کامیابی اور آزادی کے باوجود معاشرہ آپ کو 'جج' کرے گا اور آپ کو چاہے گا کہ آپ اس کے بتائے ہوئے معیار کے مطابق زندگی گزاریں۔ لیکن ہمیں بطور خواتین ایک دوسرے کو محدود نہیں کرنا چاہیے۔'

انھوں نے لکھا کہ 'جہاں تک 'اللہ اللہ کرنے کا وقت ہے' والے کمنٹ کا تعلق ہے تو آپ کو اللہ کو ہر عمر میں یاد رکھنا چاہیے۔'

آخر میں انھوں نے لکھا کہ 'اس خیال کو اس ملک سے ختم ہونا چاہیے کہ 35 سال کی عمر کے بعد آپ کو مر جانا چاہیے یا پھر دروازے کے پیچھے بند ہو جانا چاہیے۔ اگر اللہ مجھے اتنی توانائی، طاقت اور حوصلہ دیتا ہے کہ میں 55، 65، یا 75 سال کی عمر میں اتنی ہی چست رہوں اور میں ایسی رہنا بھی چاہوں تو رہوں گی۔ معاشرے کو اس بات کا درس نہیں دینا چاہیے کہ آپ کو اپنی زندگی کیسے گزارنی ہے۔'

تصویر کے کاپی رائٹ HADIQA KIANI INSTAGRAM
Image caption حدیقہ کیانی کا جواب

حدیقہ کیانی نے اپنے انسٹاگرام صفحے پر اس شخص کو بھی آڑے ہاتھ لیا تھا جو ان سے اس لیے شادی کرنا چاہتا تھا کہ وہ 'سنگل مدر' ہیں۔ انھوں نے اپنے انسٹاگرام پر بار بار لکھا کہ ’ایسے لوگوں کو معاف نہیں کرنا چاہیے جو طلاق یافتہ یا اکیلی ماؤں کی عزت نہیں کرتے اور انھیں کم تر سمجھتے ہیں‘۔

حدیقہ نے اپنی پوری زندگی اپنے انداز میں گزاری ہے اور اس پر انہیں فخر ہے۔ بالکل ان کے اپنے ہی ایک گانے کے بول کی طرح:

'زندگی جس کے مقدر میں ہوں خوشیاں تیری/ اس کو آتا ہے نبھانا سو نبھاتے گزری۔'

حدیقہ گلوکارہ ہیں، گانے لکھتی ہیں اور فلاحی کام کرتی ہیں۔ انھیں پاکستان کے بدترین سیلاب کے بعد اقوامِ متحدہ نے اپنا خیر سگالی کا سفیر مقرر کیا تھا اور انھوں نے اس حوالے سے سیلاب کی تباہ کاریوں کو اجاگر کرنے اور لوگوں کی بحالی کے کاموں کے متعلق بہت آگہی پھیلائی تھی۔ انھیں موسیقی کی خدمات کے لیے بھی پاکستان کے سب سے بڑے سویلین ایوارڈ تمغۂ امتیاز سے نوازا گیا ہے۔

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں
حال ہی میں حدیقہ کیانی کی نئی پیشکش ’وجد‘ کا پہلا گانا ’ کملی دا ڈھولا‘ ریلیز کیا گیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں