کورین پاپ سٹار سولی کی موت کی وجوہات جاننے کے لیے تفتیش جاری

سولی تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

کورین پاپ سٹار سولی 25 برس کی عمر میں انتقال کر گئی ہیں۔

پولیس نے بی بی سی کو بتایا کہ گلوکارہ کے مینجر نے انھیں جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیول کے نزدیک واقع ان کے گھر میں مردہ حالت میں پایا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پولیس کا کہنا ہے کہ موت کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات جاری ہیں اور ان خطوط ہر بھی تفتیش کی جا رہی ہے کہ آیا گلوکارہ نے خودکشی تو نہیں کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

سولی کے انسٹاگرام پر پچاس لاکھ سے زائد فالورز تھے۔ سنہ 2015 تک وہ مشہور میوزک بینڈ ایف (ایکس) کا حصہ تھیں۔ تاہم بعد ازاں انھوں نے اداکاری میں اپنے کیرئیر پر توجہ دینے کے لیے اس بینڈ کو خیر آباد کہہ دیا تھا۔

سولی کا اصل نام چوئی جن ری تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

کچھ لوگوں کا خیال ہیں کہ انھوں نے اپنے اوپر ہونے والی آن لائن تنقید کے بعد کورین پاپ سے کنارہ کشی اختیار کی تھی۔

سولی مشہور کورین پاپ سٹار جونگ یون کی قریبی دوست تھیں۔ جونگ یون نے 27 سال کی عمر میں خود کشی کر لی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

سولی نے سنہ 2017 میں اپنے دوست کے جنازے میں شرکت کی تھی اور انھیں خراج تحسین بھی پیش کیا تھا۔ سولی کی وجہ شہرت متنازعہ اور زیادہ بولنے والی شخصیت کی تھی۔

وہ 'نو برا' سکینڈل میں بھی شریک تھیں اور متعدد مواقع پر انھوں نے اپنی عریاں چھاتی بھی دکھائی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

اس نوعیت کی پہلی تصویر انھوں نے مئی 2016 میں اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ سے پوسٹ کی تھی جس کے بعد انھیں سوشل میڈیا پر شدید تنفید اور گالم گلوچ کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

گذشتہ ماہ انسٹاگرام پر لائیو چلنے والے ایک پروگرام میں ان کی چھاتی حادثاتی طور پر نظر آ گئی تھی۔ اس کے بعد جنوبی کوریا کے قدامت پسند معاشرے میں ایک نیا تنازع کھڑا ہو گیا تھا۔

اسی بارے میں