جب شاہ رخ خان کو پولیس پکڑ کر لے گئی

تصویر کے کاپی رائٹ NETFLIX
Image caption ڈیوڈ لیٹرمین کے شو میں شاہ رخ نے کھل کر باتیں کیں

شاہ رخ خان نام ہی کافی ہے

اپنی فلموں کے ذریعے شاہ رخ خان ہمیشہ ہی یہ ثابت کر نے کی کوشش کرتے رہے ہیں لیکن نیٹ فلیکس پر ڈیوڈ لیٹرمین کے شو میں یہ بات واقعی ثابت ہو گئی۔

اس شو کا نام ہی ہے 'مائی نیکسٹ گیسٹ نیڈ نو انٹروڈکشن ود ڈیوڈ لیٹرمین' یعنی 'میرے اگلے مہمان کو تعرف کی ضرورت نہیں'۔

اس انٹرویو کی خاص بات شاہ رخ خان کی بےباکی تھی۔ دنیا اور ان کے مداحوں نے پہلی بار شاہ رخ کو کچن میں کھانا بناتے بھی دیکھا۔ اس پروگرام میں شاہ رخ نے اپنے، اپنے خاندان اور کیریئر کے بارے میں کھل کر بات کی۔

شاہ رخ خان ڈگی میں کب سفر کرتے ہیں؟

’افسوس کہ ایکشن فلموں کا موقع نہیں ملا‘

’یہ میری زندگی کا سب سے المناک دن ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ NETFLIX
Image caption شاہ رخ کو گرفتار کیا گیا تھا

ڈیوڈ لیٹرمین نے ایک میگزین میں چھپنے والے مضمون کا ذکر کرتے ہوئے ان سے جیل جانے کے بارے میں سوال کیا۔ شاہ رخ نے بتایا کہ جریدے میں چھپنے والے اس مضمون پرانہیں بہت غصہ آیا تھا غصے میں انہوں نے جریدے کے مدیر کو فون کیا جس پر مدیر نے کہا کہ اس مضمون کو مذاق سمجھیں کیونکہ یہ ایک مذاق تھا۔

شاہ رخ کی گرفتاری

شاہ رخ نے قبول کیا کہ وہ غصے میں آپے سے باہر ہو گئے تھے اور اس جریدے کے دفتر پہنچ کر انہوں نے کالم گلوچ کی اس کے بعد ایک کی شوٹنگ کے دوران کچھ پولیس والے انکے فلم کے سیٹ پر پہنچے اور ساتھ چلنے کے لیے کہا۔

شاہ رخ کو پہلے لگا کہ یہ انکے مداح ہیں اور ان سے ملنے آئے ہیں بعد میں انہیں احساس ہوا کہ وہ انہیں میگزین کے ایڈیٹر کی شکایت پر گرفتار کر نے آئے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ خان بالی ووڈ کے کنگ کہے جاتے ہیں

شاہ رخ نے بتایا کہ وہ انکے ساتھ چلے گئے اور انہوں نے زندگی میں پہلی بار سیل دیکھا جو بہت چھوٹا اور گندہ تھا۔ شاہ رخ کو ایک دن پولیس حراست میں گذارنا پڑا۔

بعد میں شاہ رخ کو ضمانت مل گئی اور واپسی پر وہ اس ایڈیٹر کے گھر رکتے ہوئے گئے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ 1993 میں ایک فلم آئی تھی ’مایا میم صاحب‘، اس فلم میں انہیں ڈائریکٹر کی بیوی کے ساتھ ایک لو سین کرنا تھا، یہ نوے کی دہائی کی انتہائی بولڈ فلم کہی جاتی ہے جس میں شاہ رخ کے ساتھ ساتھ کئی کرداروں نے بولڈ سین کیے تھے۔ اس فلم کے بارے میں ایک میگزین نے لکھا تھا کہ فلم کے ڈائریکٹر کیتن مہتہ نے اپنی بیوی دیپا سا ہی کے ساتھ شاہ رخ کو ایک رات ساتھ گذارنے کے لیے کہا تھا تاکہ وہ ایک دوسرے کو سمجھ سکیں اور پھر وہ سین شوٹ کریں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ کو رومانٹک ہیرو کے ھور پر دیکھا جاتا ہے

اس آرٹیکل کو پڑھ کر شاہ رخ بہت غصہ ہوئے تھے اور میگزین کے دفتر جا کر آرٹیکل لکھنے والے کو جان سے مارنے کی دھمکی دے ڈالی تھی۔

شاہ رخ اور گھڑسواری

فلموں میں آپ نے شاہ رخ کو رومانس کرتے دیکھا ہوگا۔ کبھی کبھی وہ ایکشن بھی کرتے ہیں لیکن فلم اشوکا میں انہوں نے گھڑ سواری کی تھی اس کے بعد انہوں نے کبھی گھڑ سواری نہیں کی۔

اس بارے میں شاہ رخ نے بتایا کہ فلم اشوکا کی شوٹنگ کے دوران ڈایریکٹر نے انہیں کہا کہ جیسے ہی ایکشن ہوگا ان کا گھوڑا دوڑ پڑے گا اور انہیں صرف اپنی ایکٹنگ پر توجہ دینی ہوگی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ ہالی ووڈ اداکار مائیکل جے فوکس کو اپنا استاد مانتے ہیں

لیکن جب ایکشن بولا گیا تو ان کا گھوڑا نہیں بھاگا اس پر جب ڈائریکٹر نے گھوڑے کو چابک ماری تب وہ گھوڑا دوڑا لیکن اب گھوڑا رکنے کا نام ہی نہیں لے رہا تھا۔ جب سین ختم ہوا تو گھوڑے کو زبردستی روکا گیا۔ جب شاہ رخ نے ڈائریکٹر سے پوچھا کہ گھوڑا تو رکا ہی نہیں تو جواب میں ڈائریکٹر کا کہنا تھا کہ 'میں نے کہا تھا کہ گھوڑا دوڑے گا لیکن کب رکے گا یہ نہیں کہا تھا' اس کے بعد سے شاہ رخ نے گھڑ سواری سے توبہ کر لی تھی۔

شاہ رخ کے استاد

جب بچپن، ماں باپ اور کالج کا ذکر آیا تو یہ بھی معلوم ہوا کہ شاہ رخ ہالی ووڈ اداکار مائیکل جے فوکس کی نہ صرف ایکٹنگ کے مداح ہیں بلکہ انہیں اپنا استاد بھی تسلیم کرتے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ بچپن میں اگر کسی ہالی ووڈ اداکار سے انہیں تحریک ملی ہے یا انہوں نے کچھ سیکھا ہے تو وہ مائیکل جے فوکس ہیں۔ شاہ رخ کہتے ہیں کہ ایکٹنگ کے کئی ہنر انہوں نے انہیں سے سیکھے ہیں۔

آرین ایکٹنگ نہیں کرنا چاہتے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ کے تین بچے ہیں

شاہ رخ کے تین بچوں میں سب سے بڑے بیٹے آرین خان کی تعلیم اور کیریئر کے بارے میں شاہ رخ کا کہنا تھا کہ ان کے اکیس سال کے بیٹے آرین نیو یارک میں فلم کی پڑھائی کر رہے ہیں اور وہ بہت اچھا لکھتے ہیں لیکن انہیں نہیں لگتا کہ وہ ایکٹنگ کرنا چاہتے ہیں۔

شاہ رخ کا کہنا تھا کہ ان کے بیٹے نے خود یہ بات کہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ آرین نے اپنے پاپا سے کہا تھا کہ اگر وہ ایکٹنگ کریں گے تو ان کا موازنہ ہمیشہ ہی آپ سے کیا جائے گا۔ اگر وہ اچھا کام کریں گے تب بھی اور اگر کامیاب نہیں ہو پائے تو بھی انکا موازنہ کیا جائے گا اس طرح وہ خود کو پھنسا ہوا محسوس کریں گے اور وہ ایسا نہیں چاہتے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ کی بیٹی سہانہ بھی ابھی تعلیم حاصل کر رہی ہیں

اپنی بیٹی سہانہ خان کے کیریئر کے بارے میں زیادہ بات نہ کرتے ہوئے انہوں نے والد کے روپ میں اپنی ذمہ داریوں پر زیادہ زور دیا۔

شاہ رخ نے بتایا کہ وہ کس طرح اپنے بچوں کا دوست بننے کی کوشش کرتے ہیں اور بچے انہیں اپنے گرل فرینڈ اور بوائے فرینڈ سے متعلق مسائل پر بھی بات کر لیتے ہیں۔

شاہ رخ کا کہنا تھا کہ 'سہانہ کبھی کبھی مجھ سے پوچھتی ہے کہ وہ اپنے بوائے فرینڈ کے لیے کیا تحفہ خریدے تو میں اپنی زندگی کے تجربے کی وجہ سے سمجھ جاتا ہوں کہ کوئی لڑکا میری بیٹی کے لائق ہے یا نہیں لیکن میں کچھ نہیں کہتا بلکہ تحفہ خریدنے میں اس کی مدد کرتا ہوں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شاہ رخ اپنے بچوں کے لیے کھانا بھی بناتے ہیں

شاہ رخ بچوں کے لیے کھانا بناتے ہیں

اس شو کے ذریعے پہلی بار لوگوں نے شاہ رخ کو اپنے باورچی خانے میں کھانا بناتے دیکھا لیکن اس شو میں شاہ رخ نے ڈیوڈ لیٹر مین کے لیے مرغی بنائی تھی۔ شاہ رخ نے بتایا کہ وہ اپنے بچوں کے لیے کھانا بھی بنانا سیکھ رہے ہیں۔ شاہ رخ نے بتایا کہ وہ اطالوی کھانا بنانا سیکھ رہے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں