مائیکل جیکسن سے متعلق دستاویزات

مائیکل جیکسن
Image caption ان صفحات میں پاپ سٹار کو رواں سال جون میں موت کے متعلق معلومات نہیں ہیں

امریکہ کے وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی امریکی سنگر مائیکل جیکسن کے حوالے سے تین سو خفیہ صفحات کو منظر عام پر لے آئی ہے۔

ان صفحات میں 1993 اور 2004 کی وہ معلومات بھی موجود ہیں جس میں مائیکل جیکسن پر بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا الزام تھا۔ تاہم امریکی پاپ سٹار کے بارے میں آدھی سے زیادہ معلومات ابھی بھی خفیہ رہیں گی۔

ان صفحات میں پاپ سٹار کو رواں سال جون میں موت کے متعلق معلومات نہیں ہیں۔

سنہ دو ہزار چار میں جب بچوں کے ساتھ مبینہ جنسی زیادتی کا مقدمہ چل رہا تھا اس وقت کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مقامی پولیس نے ایف بی آئی سے درخواست کی تھی مائیکل جیکسن کی عالمی شہرت کی وجہ سے وہ دہشت گردی کا نشانہ بن سکتے ہیں۔ تاہم ایف بی آئی کا کہنا ہے کہ ایسے شواہد نہیں تھے کہ وہ دہشت گردی کا نشانہ بن سکتے ہیں لیکن پھر بھی سکیورٹی فراہم کی گئی۔

یہ دستاویزات فریڈم آف انفارمیشن ایکٹ کے تحت منظر عام پر لائے گئے ہیں جس کی درخواست امریکی خبر رساں ایجنسی اے پی اور دیگر میڈیا کی تنظیموں نے دی تھی۔

اسی بارے میں