’سوشل نیٹ ورک‘ نے میلہ لوٹ لیا

Image caption سوشل نیٹ ورک چھ شعبوں میں نامزد ہوئی تھی

سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ ’فیس بک‘ کے بارے میں بنائی جانے والی فلم ’دی سوشل نیٹ ورک‘ کو اڑسٹھویں گولڈن گلوب ایوارڈز میں بہترین فلم قرار دیا گیا ہے۔

ہالی وڈ کی ’فارن پریس ایسوسی ایشن‘ کی طرف سے منعقد کرائے جانے والے گولڈن گلوب ایوارڈ ہر سال ہالی وڈ کی پہلی بڑی فلمی ایوارڈ کی تقریب ہوتی ہے اور لاس اینجلس کے بیورلی ہلٹن ہوٹل میں منعقدہ اس تقریب کی میزبانی کے فرائض مزاحیہ اداکار رکی گریوس نے ادا کیے۔

سوشل نیٹ ورک ان ایوارڈز میں چھ شعبوں میں نامزد تھی اور اس نے بہترین فلم کے علاوہ تین اور ایوارڈ بھی جیتے۔

ڈیوڈ فنشر کو اس فلم کے لیے بہترین ہدایتکار قرار دیا گیا جبکہ اس فلم نے بہترین سکرین پلے اور بہترین موسیقی کا ایوارڈ بھی جیتا۔ اس ایوارڈ کے لیے بھارتی موسیقار اے آر رحمان بھی نامزد تھے۔

Image caption کرسچیئن بیل کو فلم ’دی فائٹر‘ میں عمدہ اداکاری پر بہترین معاون اداکار چنا گیا

اداکار کالن فرتھ کو برطانوی فلم ’کنگز سپیچ‘ میں لکنت کا شکار بادشاہ کا کردار ادا کرنے پر بہترین اداکار قرار دیا گیا جبکہ بہترین اداکارہ کا ایوارڈ نیٹلی پورٹمین کو فلم ’بلیک سوان‘ کے لیے ملا۔

اداکار کرسچیئن بیل کو فلم ’دی فائٹر‘ کے لیے بہترین معاون اداکار منتخب کیا گیا اور اسی فلم کے لیے میلیسا لیو کو بہترین معاون اداکارہ کا ایوارڈ ملا۔

اداکار پال گیاماتی کو مزاحیہ یا میوزیکل فلم کا بہترین اداکار اور اینیٹ بیننگ کو بہترین اداکارہ چنا گیا۔

فلمی دنیا میں گرانقدر خدمات پر اداکار رابرٹ ڈی نیرو کو سیسل بی ڈی میل ایوارڈ دیا گیا۔

ٹوائے سٹوری تھری کو بہترین اینیمیٹڈ فلم، ’کڈز آر آل رائٹ‘ کو بہترین مزاحیہ فلم جبکہ ڈنمارک کی فلم ’ان اے بیٹر ورلڈ‘ کو غیر ملکی زبان کی بہترین فلم قرار دیا گیا۔

اسی بارے میں