جیکسن کنسرٹ: منتظمین پر تنقید

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

برطانیہ میں مشہور گلوکار مائیکل جیکسن کی یاد میں ہونے والے کنسرٹ میں کِس (KISS) بینڈ کو مدعو کرنے پر منتظمین پر سخت تنقید کی جا رہی ہے۔

یاد رہے کہ کِس بینڈ نے مائیکل جیکسن کے حوالے سے کہا تھا کہ وہ بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کرتے تھے۔

اس کنسرٹ میں کرسٹینا ایگولیرا اور لیونا لیوس بھی پرفارم کریں گیں۔

اس کنسرٹ کو مائیکل جیکسن کی والدہ اور گلوکار کے کئی بہن بھائی کی حمایت حاصل ہے۔ تاہم مائیکل جیکسن کے دو بھائی جرمین اور رینڈی اس کنسرٹ کی حمایت میں نہیں ہیں۔

کِس بینڈ کے رکن سمنز نے فروری میں کلاسک راک نامی رسالے کو ایک انٹرویو میں مائیکل جیکسن کے بارے میں کہا تھا ’جہاں آگ ہوتی ہے وہاں دھواں بھی ہوتا ہے۔ مجھے یقین ہے کہ اس نے بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کی تھی۔ مجھے پورا یقین ہے۔‘

مائیکل جیکسن کے بھائی جرمین نے ٹوئیٹر پر ایک پیغام میں کہا ہے کہ ان کو اس بات سے دکھ پہنچا ہے کہ مائیکل جیکسن کی یاد میں ہونے والے کنسرٹ پر کِس بینڈ کو بھی بلایا جا رہا ہے۔

’مجھے افسوس ہے اور اس بات پر حیرت بھی ہے کہ اس کنسرٹ کے لیے میری والدہ کا نام استعمال کیا جا رہا ہے۔‘

اسی بارے میں