گالیانو قصوروار قرار

جان گالیانو تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اس واقعے کے بعد کِرسچن ڈیور نے جان گالیانو کو نوکری سے نکال دیا تھا

پیرس کی ایک عدالت نے مشہور فیشن ڈیزائنر جان گالیانو کو یہودیت مخالف بیانات دینے کے جرم میں قصوروار پایا ہے۔

عدالت نے گالیانو پر آٹھ ہزار یورو موخر شدہ جرمانہ عائد کیا ہے۔

برطانوی ڈیزائنر گالیانو کا شمار دنیا کے اعلی ترین فیشن ڈیزائنرز میں کیا جاتا تھا تاہم چھ مہینے پہلے ان پر الزام لگاجب انہوں نے پیرس کے ایک بار میں کچھ لوگوں سے بدتمیزی کی اور توہین آمیز زبان استعمال کی جس میں یہودیت مخالف باتیں تھیں۔ اس واقعہ کے بعد ان پر مقدمہ درج ہوا۔

اس متنازع واقعہ کے بعد فیشن ہاؤس کرسچن ڈیور نے گالیانو کو نوکری سے نکال دیا اور ان سے لا تعلقی قائم کر لی تھی۔

کچھ ہفتے پہلے ہونے والی ایک عدالتی سماعت میں گالیانو نے عدالت سے اپنے باتوں پر معذرت کی تھی اور بتایا تھا کہ اس واقعہ کے وقت وہ اپنے کام سے متعلق انتہائی دباؤ کا شکار تھے۔ وہ واقعہ کے وقت نشے کی حالت میں بھی تھے۔