جوہانسن کو دیکھنے سے توجہ متاثر

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption گرل ود آ ڈریگن ٹیٹو چھبیس نومبر کو برطانیہ میں رلیس ہو رہی ہے۔

امریکی ہدایت کار ڈیوڈ فِنچر نے کہا ہے کہ انھوں نے ’گرل ود آ ڈریگن ٹیٹو‘ نامی فلم میں اداکارہ سکارلٹ جوہانسن کو اس لیے مرکزی کردار نہیں دیا کیونکہ اداکارہ کو دیکھنے سے ناظرین کی توجہ بٹ سکتی تھی۔

انھوں نے ووگ میگیزین کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ جوہانسن نے ہیروئن کے لیے زبردست آڈیشن دیا تھا لیکن سکارلٹ کو کردار دینے کا مسئلہ یہ ہے کہ ’آپ یہی انتظار کرتے رہ جاتے ہیں کہ وہ اپنے کپڑے کب اتاریں گیں۔‘

تاہم اس کردار کے لیے چھبیس سالہ رونی مارا نامی اداکارہ کو چنا گیا ہے جنھوں نے اس سے قبل ڈیوڈ فنچر کی دی سوشل نیٹ ورک نامی فلم میں بھی کام کیا ہوا ہے۔

گرل وِد دی ڈریگن ٹیٹو سٹیگ لارسن کی مشہور کتاب پر مبنی ہے اور یہ فلم چھبیس نومبر کو برطانیہ میں ریلیز ہو رہی ہے۔ لارسن اپنی کتاب کے چھپنے سے پہلے ہی دو ہزار چار میں انتقال کر گئے تھے۔

واضح رہے کہ اس فلم کا سویڈش ورژن پچھلے سال برطانیہ میں ریلیز ہو چکا ہے۔