کچھ حد تک بھارتی ہپی ہوں:لیڈی گاگا

لیڈی گاگا تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption میں نے اس شو پر بہت محنت کی ہے اور میں اس کے بارے میں بہت پرجوش ہوں:لیڈی گاگا

عجیب و غریب اور انوکھے ملبوسات اور سٹیج پرفارمنسز کے لیے مشہور بین الاقوامی پاپ سٹار لیڈی گاگا کچھ حد تک خود کو بھارتی ہپی مانتی ہیں۔

گریمی ایوارڈ یافتہ پچیس سالہ گلوکارہ چار روزہ دورے پر بھارت میں ہیں اور وہ یہاں تیس اکتوبر کو بھارت کی پہلی فارمولا ون ریس کے بعد ہونے والی پارٹی میں اپنے فن کا مظاہرہ کرنے آئی ہیں۔

بھارت پہنچنے کے بعد پریس کانفرنس میں صحافیوں سے بات چیت کے دوران لیڈی گاگا کا کہنا تھا کہ وہ بھارتی روحانی گرو اوشو کی کتابیں پڑھتی ہیں۔ انہوں نے کہا، ’میں اوشو کی کتابیں اس لیے پڑھتی ہوں کیونکہ انہوں نے جن باتوں کے بارے میں لکھا ہے، میں انہیں پسند کرتی ہوں۔ ساتھ ہی میں خود کو ایک طرح سے بھارتی ہپی مانتی ہوں‘۔

سنہ دو ہزار آٹھ میں اپنی پہلی البم ’دی فیم‘ سے شہرت پانے والی لیڈی گاگا کا کہنا تھا کہ بھارت میں فن کا مظاہرہ کرنے کا موقع ملنے پر وہ خود کو خوش قسمت سمجھتی ہیں۔ ان کا کہنا تھا، ’میں نے کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ مجھے بھارت آ کر پرفارم کرنے کا موقع ملے گا اور میں اپنے بھارتی مداحوں سے مل پاؤں گي۔ میں سب کا شکریہ ادا کرنا چاہتی ہوں‘۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ مستقبل میں بھی بھارت آنا چاہیں گی۔

لیڈی گاگا اپنی موسیقی کے لیے جتنی مشہور ہیں، ان کی اتنی ہی شہرت عجیب و غریب پوشاكوں کے لیے بھی ہے۔

خام گوشت سے بنا لباس ، اونچی ہیل اور انوكھے ڈیزائن کے جوتے ، رنگے ہوئے بال، طرح طرح کے ہیئرسٹائل یہ سب لیڈی گاگا کی شناخت کے ساتھ منسلک ہیں۔

وہ اکثر اپنے لباس سے لوگوں کو چونکا دیتی ہیں لیکن بھارت میں اپنے پہلے شو کے لیے وہ کیا پہنیں گي، اس بات کو وہ فی الحال راز ہی رکھنا چاہتی ہیں۔ تاہم انہوں نے یہ ضرور کہا کہ ان کے لباس میں بھارتی چھاپ بھی ہوگی۔

اس شو کے لیے ایک خاص سٹیج بھی بنایا گیا ہے۔ لیڈی گاگا نے کہا، ’میں نے اس شو کے لیے ایک خاص طرح کا سٹیج تعمیر کروایا ہے جو اس سے پہلے دنیا میں کہیں اور نہیں بنوایا گیا۔ جہاں تک موسیقی کی بات ہے ، میں نے جن بھارتی ڈي جیز کے ساتھ کام کیا ہے، وہ بھی شو کا حصہ ہوگا‘۔

انہوں نے کہا کہ ’میں نے اس شو پر بہت محنت کی ہے اور میں اس کے بارے میں بہت پرجوش ہوں‘۔

اسی بارے میں