’سُپرمین‘ سب سے مہنگی کامِک بک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ پہلا موقع ہے کوئی کامِک بک بیس لاکھ ڈالر سے زیادہ میں فروخت ہوئی ہے

’ ایکشن کامِکس‘ کا پہلا شمارہ، جس میں پہلی بار ’سُپرمین‘ کا کردار پیش کیا گیا تھا، دنیا کی سب سے مہنگی کامِک بک بن گئی ہے۔

جمعرات کو ایک آئن لائن نیلامی میں یہ کامِک بک اکیس لاکھ ساٹھ ہزار ڈالر میں فروخت ہوئی ہے۔

نیلامی کا آغاز ایک ڈالر کی قیمت سے کیا گیا جبکہ فروخت کنندہ نے اس کی کم از کم قیمت نو لاکھ ڈالر مقرر کی تھی۔

نیلامی کے منتظمین نے خریدنے اور بیچنے والوں، دونوں کی شناخت صیغۂِراز میں رکھی لیکن بہت سے لوگوں کا خیال ہے کہ بیچنے والے ہالی وڈ کے مشہور اداکار نیکولس کیج ہیں جنہوں نے سن اُنیس سو ستانوے میں اسی شمارہ کی ایک کاپی ڈیڑھ لاکھ ڈالر میں خریدی تھی ۔

نیکولس کیج سپرمین کردار کے بہت بڑے مداح ہیں اور انہوں نے اپنے بیٹے کا نام ’کعل ال‘ رکھا ہے جو کہ سپرمین کے کردار کا اصلی نام ہے۔

یہ پہلی بار ہے کہ کسی بھی کامِک بک کی قیمت بیس لاکھ ڈالر سے زیادہ بڑھ گئی ہے۔ یہ کامِک بک انیس سو اڑتیس میں شائع کی گئی تھی اور اس کی قیمت دس سنٹ تھی۔

خیال کیا جاتا ہے کہ ’ایکشن کامِکس‘ کے پہلے شمارے کی تقریباً سو کاپیاں آج بھی موجود ہیں مگر اُن میں صرف چند ہی اچھی حالت میں ہیں۔ اسی شمارے کی ایک اور کاپی مارچ میں پندرہ لاکھ ڈالر میں فروخت کی گئی لیکن اُس کی حالت قدرے خراب تھی۔

کامِک بکس کی دنیا کے ماہرین کا کہنا ہے کہ نایاب اشیاء کی خریدوفروخت میں سرمایہ کاری کرنے کا رجحان بڑھتا جا رہا ہے کیونکہ آجکل کے مشکل اقتصادی حالات میں نایاب اشیاء اپنی قدر پراپرٹی یا کاروباری حصص کے مقابلے میں بہتر طور پر برقرار رکھتی ہیں۔

اسی بارے میں