ہدایت کار سید نور ہسپتال میں زیرِعلاج

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption سید نور ایک پنجابی فلم کی ہدایت کاری کے سلسلے میں کچھ عرصے سے دوبئی میں تھے

پاکستان کے معروف ہدایت کار اور فلم ساز سید نور کو لاہور کے شیخ زید ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں وہ زیرِ علاج ہیں۔

ڈاکٹروں کے مطابق سید نور کو دماغ کی شریان میں رکاوٹ پیدا ہونے کے باعث ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے تاہم فی الوقت ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

نامہ نگار عبادالحق کے مطابق سید نور کی طبیعت سنیچر کی صبح اس وقت اچانک بگڑ گئی جب وہ ناشتہ کر رہے تھے۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ شریان میں پیدا ہونے والی رکاوٹ کو ادویات کے ذریعے دور کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

سیدنور کی اہلیہ اور فلمی اداکارہ صائمہ کے مطابق سید نور اپنی مصروفیات کی وجہ سے پچھلے کچھ عرصے سے اپنی صحت کی طرف توجہ نہیں دے رہے تھے۔

فلمی دنیا سے تعلق رکھنے والے مختلف افراد نے ہپستال جا کر سید نور کی عیادت کی جبکہ پنجاب کے وزیرِاعلیٰ میاں شہباز شریف کی جانب سے سید نور کو گلدستہ ببجھوایا گیا۔

سید نور ایک پنجابی فلم کی ہدایت کاری کے سلسلے میں کچھ عرصے سے دوبئی میں تھے اور چند روز پہلے ہی وطن واپس لوٹے تھے۔

سید نور کا شمار پاکستان کے معروف ہدایت کاروں اور فلم سازوں میں ہوتا ہے اور اس سال بھی ان کی تین فلمیں نمائش کے لیے پیش کی گئیں۔

اسی بارے میں