ریٹائرمنٹ کی عمر میں رومانس کے مواقع

تصویر کے کاپی رائٹ pr
Image caption ’ بعض کردار ابھی بھی ایسے ہیں وہ لوگ صرف مجھ سے کروانا چاہتے ہیں‘

بالی وڈ اداکار نصیرالدین شاہ کا کہنا ہے کہ وہ خوش قسمت ہیں کہ جس عمر میں انہیں ریٹائر ہونے کےبارے میں سوچنا چاہیے اس عمر میں انہیں رومانوی کردار کرنے کو مل رہے ہیں۔

نصیرالدین شاہ کی عمر بھلے ہی اکسٹھ برس ہوگئی ہو لیکن سلور سکرین پر وہ ابھی بھی ایسے کردار کررہے ہیں جس میں اپنے سے آدھی عمر کی لڑکیوں کے ساتھ ناچ گانا اور رومانس کرتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

حال ہی میں ریلیز ہوئی فلم ’دا ڈرٹی پکچر‘ میں نصیرالدین شاہ کی اداکاری کی بے حد تعریف ہوئی ہے۔ ان کا ماننا ہے کہ آج کل انہیں جس طرح کے کردار مل رہے ہیں ویسے کردار انہوں نے کبھی نہیں کیے۔

ان کا کہنا ہے ’میں بہت قسمت والا ہوں کیونکہ جس عمر میں مجھے ریٹائر ہونے کے بارے میں سوچنا چاہیے اس عمر میں مجھے جوان لڑکیوں کے ساتھ رومانٹک کردار کرنے کو مل رہے ہیں‘۔

ان کا مزید کہنا ہے ’ اس عمر میں مجھے اداکاری کے اعتبار سے بعض ایسے مواقع مل رہے ہیں جو مجھے اپنے پورے کیریئر میں نہیں ملے۔ میں شکر ادا کرتا ہوں کہ بعض کردار ابھی بھی ایسے ہیں وہ لوگ صرف مجھ سے کروانا چاہتے ہیں‘۔

نصیرالدین کہتے ہیں وہ بھلے ہی ساٹھ برس کے ہوگئے ہیں لیکن ان کا دل ابھی بھی جوان ہے۔

ان کے مطابق ’آج میں بالکل ایسا ہی محسوس کرتا ہوں جیسا میں جب بائیس سال کا تھا تب کرتا تھا۔ ہاں فرق صرف اتنا ہے کہ تب سے لیکر اب تک میں نے کتابیں زیادہ پڑھ لی ہیں اور کچھ فلمیں اور دیکھ لی۔ آج بھی میں زندگی کو اسی انداز سے دیکھتا ہوں جیسے جوانی میں دیکھتا تھا۔ میں زندگی کا بھرپور مزا لے رہا ہوں‘۔

اسی بارے میں