شرمین چنوئے کی فلم آسکر کے لیے نامزد

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

ایمی ایوارڈ یافتہ فلم ساز شرمین عبید چنوئے پاکستان کی پہلی فلم ساز ہیں جنہیں آسکر ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔

شرمین عبید چنوئے کی فلم ’سیونگ فیس‘ کو قلیل دورانیے کی دستاویزی فلموں کے زمرے میں نامزد کیا گیا ہے۔

یہ فلم ایک پاکستانی نژاد برطانوی ڈاکٹر کی کہانی ہے جو کہ پاکستان میں عورتوں پر تیزاب پھینکے جانے کے واقعات کے پیشِ نظر اپنا وقت اور ہنر ان مظلوم عورتوں کی مدد کرنے کے لیے وقف کرتے ہیں۔ اس کہانی سے پاکستانی معاشرے کے ایک افسوسناک پہلو پر روشنی ڈالی گئی ہے۔

کراچی سے تعلق رکھنے والی شرمین عبید یہ فلم ہدایتکار ڈینیئل جنگ کے ساتھ مل کر تیار کر رہی ہیں۔ اس فلم کی ریلیز مارچ سنہ دو ہزار بارہ میں متوقع ہے۔

شرمین عبید اس سے پہلے ’پاکستانیز طالبان جنریشن‘ اور ’عراق: دی لوسٹ جنریشن‘ جیسی عالمی شہرت یافتہ فلموں کی ہدایتکاری کر چکی ہیں۔