پاکستانی فلمساز شرمین عبید آسکر جیت گئیں

آخری وقت اشاعت:  پير 27 فروری 2012 ,‭ 04:16 GMT 09:16 PST

شرمین عبید کی فلم ’سیونگ فیس‘ کو قلیل دورانیے کی دستاویزی فلموں کے زمرے میں نامزد کیا گیا تھا

امریکی شہر لاس اینجلس میں ہونے والے چوراسی ویں اکیڈمی ایوارڈ میں پاکستانی فلمساز شرمین عبید چنوئے نے اپنی فلم ’سیونگ فیس‘ کے لیے آسکر ایوارڈ جیت لیا ہے۔

آسکر ایوارڈز کی تاریخ میں شرمین پہلی پاکستانی ہیں جنہیں اس اعزاز سے نوازا گیا ہے۔

ایوارڈ حاصل کرنے کے بعد شرمین کا کہنا تھا کہ وہ یہ ایوارڈ اُن تمام پاکستانی لوگوں کے نام کرتی ہیں جو تیزاب سے جھلسائے جانے والی خواتین کی بحالی کے لیے کام کرتے ہیں۔

انہوں نے خاص طور پر یہ ایوارڈ اس فلم کے مرکزی کرداروں کے نام کیا جن میں پلاسٹک سرجن ڈاکڑ محمد جواد، رخسانہ اور ذکیہ (جن کے چہرے تیزاب سے جُھلسا دیئے گئے) شامل ہیں۔

شرمین نے پاکستان میں تبدیلی کے لیے کام کرنے والی تمام خواتین کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ ’خواب دیکھنا کبھی مت چھوڑیں۔‘

شرمین عبید کو اس سے پہلےایمی ایوارڈ سے بھی نوازا گیا ہے۔

شرمین عبید کی فلم ’سیونگ فیس‘ کو قلیل دورانیے کی دستاویزی فلموں کے زمرے میں نامزد کیا گیا تھا۔

یہ فلم ایک پاکستانی نژاد برطانوی ڈاکٹر کی کہانی ہے جو کہ پاکستان میں عورتوں پر تیزاب پھینکے جانے کے واقعات کے پیشِ نظر اپنا وقت اور ہنر ان مظلوم عورتوں کی مدد کرنے کے لیے وقف کرتے ہیں۔

فلم کی کہانی سے پاکستانی معاشرے کے ایک افسوسناک پہلو پر روشنی ڈالی گئی ہے۔

کراچی سے تعلق رکھنے والی شرمین عبید نے یہ فلم ہدایتکار ڈینیئل جنگ کے ساتھ مل کر تیار کی۔اس فلم کی ریلیز مارچ سنہ دو ہزار بارہ میں متوقع ہے۔

شرمین عبید اس سے پہلے ’پاکستانیز طالبان جنریشن‘ اور ’عراق: دی لوسٹ جنریشن‘ جیسی عالمی شہرت یافتہ فلموں کی ہدایتکاری بھی کر چکی ہیں۔

’جہاں کوئی بات نہ کرے وہاں میں بات کرتی ہوں‘

آسکرز ایوارڈ کے لیے نامزد ہونے والی پہلی پاکستانی فلمساز شرمین عبید چنائے سے بی بی سی اردو کے وسعت اللہ کی خصوصی بات چیت

دیکھئیےmp4

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔