جان ابراہم کی گرفتاری اور رہائی

جان ابراہم، دیپیکا پادوکون تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption جان ابراہم ہندی فلموں کے اداکار ہیں

بالی وڈ اداکار جان ابراہم کو لاپرواہی سے ڈرائیونگ کرنے کے ایک پرانے مقدمے میں حراست میں لیے جانے کے بعد ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے۔

انہیں جمعہ کو پولیس نے پندرہ دن کے لیے حراست میں لیا تھا تاہم ہائی کورٹ سے ضمانت منظور ہونے کے بعد انہیں رہائی مل گئی۔

انھیں یہ ‎سزا 2006 میں ٹکر مار کر فرار ہونے کے ایک واقعے کے لیے ممبئی کی ایک مجسٹریٹ عدالت نے سنہ 2010 میں سنائی تھی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ انھیں پہلے بھی ضمانت پر رہا کر دیا گیا تھا اور جان ابراہم نے اس مقدمے کے خلاف سیشن کورٹ میں اپیل دائر کر رکھی تھی۔

لیکن سیشن عدالت کے جج این وی نوکھر نے جمعہ کو نچلی عدالت کے ذریعہ دی گئی سزا برقرار رکھی جس کے بعد جان ابراہم کو حراست میں لے لیا گیا۔

اس پر جان ابراہم کے وکیل نے عدالت کے فیصلے کے خلاف ہائی کورٹ میں عرضی داخل کیا جہا‎ں سے انھیں ضمانت دے دی گئی۔

سنہ 2006 میں ممبئی کے کھار کے علاقہ میں ابراہم کی موٹر سائیکل سے ٹکرا کر دو اشخاص زخمی ہو گئے تھے۔ یہ حادثہ اس وقت پیش آیا تھا جب ان کی موٹر سائیکل پھسل گئی تھی اور دو نوجوان اس کی زد میں آ گئے تھے۔

فلم جسم سے اپنے فلمی کیریئر کی شروعات کرنے والے انتالیس سالہ جان ابراہم اس سال دھوم تھری اور دوستانہ ٹو کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔

اسی بارے میں