جارج کلونی گرفتاری کے بعد رہا ہو گئے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption جارج کلونی اور ان کے والد کو گرفتاری کے تین گھنٹے بعد سو ڈالر کے جرمانے پر رہا کر دیا گیا۔

امریکی فلمی صنعت ہالی ووڈ کے معروف اداکار جارج کلونی کو گرفتاری کے تین گھنٹے بعد ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے۔

وہ واشنگٹن میں سوڈانی سفارتخانے کے باہر ایک احتجاجی مظاہرے میں شریک تھے۔

تاہم مظاہرے کے شرکاء کا کہنا ہے کہ سوڈانی صدر عمر البشیر کی حکومت نے جنوبی سوڈان کے متاثرین کے لیے بھیجی گئی خوراک اور رسد سرحد پر روک رکھی ہے۔

پولیس نے مظاہرین کو سفارتخانے کی حدود چھوڑنے کا کہا جو نہ کرنے پر اداکار جارج کلونی سمیت ان کے والد نک کو گرفتار کر لیا گیا۔

جارج کلونی اور ان کے والد کو گرفتاری کے تین گھنٹے بعد سو ڈالر کے جرمانے پر رہا کر دیا گیا۔

گرفتاری سے کچھ دیر قبل جارج کلونی کا کہنا تھا ’ہم یہاں دو مطالبات کے ساتھ آئے ہیں۔ پہلے مطالبے پر فوری عمل درآمد ہونا چاہیے۔وہ یہ ہے کہ سوڈان میں امدادی سامان لیجانے کی اجازت دی جائے اس سے پہلے کہ وہاں دنیا کا بدترین انسانی بحران پیدا ہو۔‘

ان کا مزید کہنا تھا ’دوسرا مطالبہ یہ ہے کہ خرطوم کی حکومت اپنے بے گناہ شہریوں، مردوں، خواتین اور بچوں کو قتل کرنا بند کر دے ان کے ریپ اور انہیں بھوکے مارنے کا سلسلہ بند کرے۔‘

واضح رہے کہ جنوبی سوڈان، سوڈان سے سنہ دو ہزار گیارہ میں آزاد ہوا تھا لیکن دونوں ممالک کے درمیان تعلقات تب سے خراب ہیں۔ جنوبی سوڈان کا شمار دنیا کے غریب ترین خطوں میں کیا جاتا ہے اور ملک میں سڑکیں، سکول اور ہسپتال نہ ہونے کے برابر ہیں۔

اسی بارے میں