سگریٹ نوشی: شاہ رخ خان کا اقبالِ جرم

بالی ووڈ سٹار شاہ رخ خان تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شاہ رخ خان کرکٹ ٹیم کولکتہ نائٹ رائڈر کے مالک ہیں

بالی وڈ سٹار شاہ رخ خان نے جے پور میں ایک سٹیڈیم میں کھلے عام سگریٹ نوشی سے متعلق ایک مقدمے میں اقبالِ جرم کیا ہے۔

آئی پی ایل کی کرکٹ ٹیم کولکتہ نائٹ رائڈر کے مالک شاہ رخ خان نے عدالت سے اپیل کی ہے کہ انہیں عدالت میں ذاتی حاضری سے مستثنٰی قرار دیا جائے۔

شاہ رخ خان نے آٹھ جون کو جے پور میں ہونے والے ایک میچ کے دوران سٹیڈیم میں کھلے عام سگریٹ نوشی کرنے پر جرمانہ ادا کرنے کی پیشکش بھی کی ہے۔

جے پور کے ایک مقامی باشندے نے شاہ رخ خان کی کھلے عام سگریٹ نوشی کے خلاف شکایت درج کی تھی جس کے بعد عدالت نے انہیں طلب کیا تھا۔

عدالت نے انہیں نوٹس بھیج کر سنیچر کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا تھا۔

شاہ رخ تو عدالت نہیں پہنچے لیکن ان کے وکیل نےعدالت میں حاضر ہوکر ان کی جانب سے اقبالِ جرم کیا۔

شاہ رخ کے وکیلوں کا کہنا تھا کہ کھلے عام سگریٹ نوشی ایک جھوٹا جرم ہے جس کا جرمانہ سو روپے ہے ۔

بالی وڈ سٹار نے اپنے تحریری بیان میں درخواست کی کہ وہ یہ معاملہ قانون کے تحت نمٹانا چاہتے ہیں اس لیے انہیں اپنے وکلاء کے ذریعے اقبالِ جرم کرنے کی اجازت دی جائے۔

عدالت نے اس مقدمے کی سماعت اکیس جون تک کے لیے ملتوی کر دی ہے۔شاہ رخ کے خلاف شکایت کرنے والے نیمی سنگھ راٹھور کا کہنا ہے کہ وہ عدالت سے درخواست کریں گے کہ شاہ رخ کو عدالت کے سامنے حاضر ہونے کے لیے کہا جائے۔

شاہ رخ کو سٹیڈیم میں سیگریٹ نوشی کی اجازت دینے پر جے پور پولیس پہلے ہی راجستھان کرکٹ ایسو سی ایشن پردو سو روپے کا جرمانہ عائد کر چکی ہے۔

اسی بارے میں