’ایک سال میں ایک جھگڑا اور دو فلمیں‘

شاہ رخ خان تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption شاہ رخ خان کی ٹیم کولکاتہ نائٹ رائڈر نے حال ہی میں آئی پی ایل میں جیت حاصل کی ہے

حال ہی میں شاہ رخ خان کی کرکٹ ٹیم کولکاتہ نائٹ رائڈرز نے آئی پی ایل کے پانچویں سیزن کے فائنل میں فتح حاصل کی ہے۔ گزشتہ کچھ دنوں سے اپنے مبینہ متنازعہ رویہ اور بیانات پر تنقید کا نشانہ بننے والے شاہ رخ خان اس فتح سے بے حد خوش ہیں۔

ٹیم کی جیت کے بعد شاہ رخ نے میڈیا سے بات کی اور کہا کہ’میری ٹیم ضرور جیتی ہے لیکن مجھے یہ بات چیت کرنے کا کوئی حق نہیں ہے، یہ کھلاڑیوں کی جیت ہے‘۔

انکا کہنا تھا ’میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ کولکاتا نائٹ رائڈرس کو میری وجہ سے جم کر تعریف اور تنقید جھیلنی پڑتی ہے۔میری وجہ سے ہی میرے کھلاڑیوں کو کچھ منفی باتیں سننے کو ملی ہونگیں جو انہیں ایک کھلاڑی کے طور پر کبھی سننے کو نہیں ملتیں‘۔

واضح رہے کہ پانچ برس پہلے آئی پی ایل کے آغاز سےاب تک یہ پہلی بار ہے کہ جب کولکاتہ نائٹ رائڈر فائنل میں پہنچی اور اس نے فتح حاصل کی۔

اس بارے میں شاہ رخ خان نے کہا ’مجھے خوشی اس بات کہ ہے کہ اب ہمارے اوپر سے شکست کا بوجھ اتر گیا ہے اور اب ہم بغیر دباؤ کے کھیل سکیں گے‘۔

انکا کہنا تھا ’مجھے نہیں لگتا کہ میرے میدان پر رہنے سے کوئی فرق پڑتا ہے۔ کھیل میں ہار جیت ہوتی ہی رہتی ہے، لیکن جب ٹیم ہارتی ہے تو میری کوشش رہتی ہے کہ سٹیڈیم میں ہی رہوں تاکہ میں کھلاڑیوں کی حوصلہ افضائی کرسکوں‘۔

انکا مزید کہنا تھا ’اگر میں اب یہ بات کہوں گا تو لوگ کہیں گے کہ میں اپنے ہوش میں نہیں ہوں، لیکن یہ سچ ہے کہ جب میری ٹیم جیتی تو مجھے زندگی میں پہلی بار لگا کہ اگر میں بالکنی سے کود جاؤں تو میں اڑ سکتا ہوں۔ میں اتنا خوش تھا۔ میری بہن اور میری بیٹی نے میری ٹی شرٹ کھینچ کر مجھے روکا۔ مجھے بہت برا لگا۔ اگر وہ ایسا نہ کرتے تو میں پہلا شخص ہوتا جو اڑ سکتا تھا۔اور یہ جنون نہیں تھا یہ میری خوشی تھی‘۔

حال ہی میں شاہ رخ پر الزام لگا تھا کہ انہوں نے اپنے شائقین کو جوتا دکھایا، اس کے بارے میں انکا کہنا تھا ’گزشتہ دنوں میں نے اخبار میں پڑھا کہ میں نے شائقین کو جوتا دکھایا لیکن سچ یہ نہیں ہیں۔ دراصل جب میں جیت کے بعد شائقین کے قریب گیا تو ایک آدمی نے کہا کہ آج آپ پھٹی جینز پہن کر کیوں نہیں آئے۔ اس کے مطابق میری پھٹی جینز میرے لئے خوش قسمت ہے۔میں نے اسے اپنے پاؤں اٹھا کر دکھایا کہ نیچے سے میری جینز پھٹی ہوئی ہیں اور اگر تم چاہتے ہو تو اسے اور پھاڑ دو اور اخبار میں چھپا کہ میں ناظرین کو جوتا دکھا رہا ہوں‘۔

انکا کہنا تھا ’ویسے بہت سے لوگ مجھے نوجوانوں کے لئے رول ماڈل مانتے ہیں لیکن میں کئی ایسے کام کرتا ہوں جو صحیح نہیں ہیں۔ میں رات بھر سوتا نہیں، کافی پیتا ہوں، رات کو خوب پارٹی کرتا ہوں، مجھ پر کئی کیس ہیں اور میں ایک اداکار کے طور پر کام کرتا ہوں، جسے کئی لوگ اچھا کام نہیں سمجھتے‘۔

اب میں نے ایک اور بات کا فیصلہ کیا ہے کہ میں اب سال میں ایک ہی جھگڑا کروں گا، ایک جھگڑا کافی ہے دو جھگڑے نہیں کر سکتا۔ میں دو فلمیں ریلیز کروں گا اور ایک جھگڑا کروں گا۔ بس!

اسی بارے میں