’ایک تھا ٹائیگر‘ کی تشہیر پر پابندی

Image caption اس فلم میں سلمان خان نے بھارتی خفیہ ادارے ’را‘ کے ایجنٹ کا کردار ادا کیا ہے

پاکستان میں بالی وڈ اداکار سلمان خان کی آنے والی فلم ’ایک تھا ٹائیگر‘ کے تشہیری پروموز پر پابندی لگا دی گئی ہے۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی نے پاکستان کے کیبل آپریٹرز اور سیٹلائٹ ٹی وی چینلز کو ہدایت دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ فلم پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کی شبیہ کو غلط طریقے سے پیش کر رہی ہے۔

فلم کے ہدایت کار کبیر خان نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ’ایک تھا ٹائیگر، کسی بھی طرح سے سخت گیر موقف کے حامیوں یا پاکستان کی مخالف فلم نہیں ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’افسوس کی بات ہے کہ انڈسٹری میں پہلے کچھ شدت پسند فلمز بنائی گئیں جس کا نتیجہ آج ہم بھگت رہے ہیں۔ میں پاکستان میں سلمان کے مداحوں کو یقین دلاتا ہوں کہ پاکستان سنسر بورڈ یہ فلم دیکھنے کے بعد کسی طرح کا اعتراض نہیں اٹھائے گا اور ان کے تھیٹرز میں یہ فلم ضرور ریلیز ہوگی‘۔

’ایک تھا ٹائیگر‘ میں سلمان خان بھارتی خفیہ ادارے ’را‘ کے ایجنٹ کا کردار نبھاتے نظر آئیں گے جنہیں ایک مشن کے تحت پاکستان بھیجا جاتا ہے۔ اس فلم میں کترینہ کیف اور رنویر شوري بھی اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔

یش راج فلمز کی یہ فلم بھارت میں پندرہ اگست کو ریلیز ہو رہی ہے۔

یہ پہلا موقع نہیں کہ پاکستان میں فوج یا خفیہ اداروں کے بارے میں کرداروں کی وجہ سے کوئی بھارتی فلم متنازع بنی ہے۔

رواں برس مارچ میں ایک اور بالی وڈ فلم ’ایجنٹ ونود‘ کی پاکستان میں نمائش پر پابندی لگی تھی۔ اس فلم میں بھی آئی ایس آئی کی شبیہ خراب کرنے کی بات کہی گئی تھی۔

’ایجنٹ ونود‘ کے ڈائریکٹر شری رام راگھون نے بی بی سی سے بات چیت میں کہا، ’مجھے لگتا ہے کہ کوئی بھی فلمساز جان بوجھ کر کسی ملک یا اس کی ایجنسی کو بدنام کرنے کا ارادہ نہیں رکھتا پر کیونکہ پہلے کچھ فلمز ایسی بنی ہیں جس میں پاکستان مخالف باتیں دکھائی گئی ہیں، شاید اس لیے پاکستان میں سوچا جاتا ہے کہ کچھ بھی ہوگا تو اس پر پابندی لگا دو۔ یہ بات الگ ہے کہ بعد میں وہاں یہی فلمز پائریٹڈ سی ڈیز پر دیکھی جاتی ہے‘۔

اسی بارے میں