راجیش کھنہ کی آخری رسومات ادا کر دی گئیں

راجیش کھنہ تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption راجیش کھنہ کے مداح اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے

بالی وڈ کے نامور اداکار راجیش کھنہ کے آخری رسومات ممبئی میں ادا کر دی گئی ہیں۔

اس موقع پر راجیش کھنہ کو ’آخری سلام‘ کہنے کے لیے فلمی دنیا کے علاوہ بڑی تعداد میں عام عوام وہاں موجود تھے۔

اطلاعات کے مطابق راجیش کھنہ کے نواسے یعنی ٹوئنکل کھنہ اور اکشے کمار کے بیٹے نے باقاعدہ طور پر ان کی چتا کو آگ دکھائی

اس موقع پر راجیش کھنہ کی اہلیہ ڈمپل کپاڈیا، ان کی دونوں بیٹیاں ٹوئنکل اور رنکی کھنہ کے علاوہ ان کے خاندان کے دیگر افراد بھی موجود تھے۔

اس کے علاوہ بڑی تعداد میں بالی وڈ ستاروں نے فلمی دنیا کے ’کاکا‘ کی رہائش گاہ پر جا کر انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔

راجیش کھنہ کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے سب سے پہلے ان کے گھر پہنچنے والوں میں بالی وڈ اداکار امیتابھ بچن، ابھیشیک بچن، سلمان خان، شاہ رخ خان کے نام شامل ہیں۔

بڑی تعداد میں ان کے مداح بھی وہاں موجود تھے اور بھیڑ کو قابو کرنے کے لیے سکیورٹی کا سخت بندوبست کیا گیا تھا اور ان کی رہائش گاہ سے چتا جلانے کے مقام تک بڑی تعداد میں سکیورٹی اہلکار تعینات تھے۔

راجیش کھنہ بدھ کی صبح ممبئی میں اپنی رہائش گاہ پر انہتر برس کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ pr
Image caption راجیش کھنہ نے مسلسل سولہ ہٹ فلموں میں کام کیا تھا۔

وہ ایک طویل عرصے سے سرطان کے مرض میں مبتلا تھے اور گزشتہ ماہ ان کی صحت زیادہ خراب ہو گئی تھی۔

راجیش کھنہ نے امردیپ، دو راستے، بے وفائی، محبوب کی مہندی، آرادھنا، کٹی پتنگ اور آنند جیسی مقبول ترین فلموں میں کام کیا۔ ان کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ہندی فلم کے پہلے ایسے ہیرو تھے جس نے لگاتار پندرہ سپرہٹ فلموں میں کام کیا۔

وہ ساٹھ اور ستّر کے عشرے کے دوران راجیش کھنہ ممبئی فلم انڈسٹری کے سب سے مقبول اداکار تھے اور انہیں بالی وڈ کا پہلا سپر سٹار کہا جاتا ہے۔

ستر کی دہائی کے ساتھ ہی راجیش کھنہ کا سنہری دور بھی ختم ہونے لگا تھا۔ ان کی فلمیں باکس آفس پر فلاپ ہونے لگیں کیونکہ بالی وڈ کو ’اینگری ینگ مین‘ امیتابھ بچن میں اپنا نیا سپر سٹار مل گیا تھا۔

اسی بارے میں