معروف امریکی موسیقار رابرٹو وائین چل بسے

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 17 اگست 2012 ,‭ 01:27 GMT 06:27 PST

چھپن سالہ رابرٹ وائین سنہ انیس سو بانوے میں سر ایلٹن جان کے میوزک گروپ میں شامل ہوئے

امریکہ کے معروف گٹار نواز رابرٹ وائین برچ چھپن برس کی عمر میں انتقال کر گئے۔

ان کی لاش جمعرات کولاس ایجنلس میں ان کے اپارٹمینٹ سے ملی۔ ان کے سر میں گولی کا نشان تھا۔

امریکی ریاست لاس ایجنلس کے اسسٹنٹ تفتیشی افسر ایڈ وینٹر کا کہنا ہے کہ اس کیس کی ممکنہ خود کشی کے حوالے سے تفتیش کی جا رہی ہے۔

چھپن سالہ رابرٹ وائین برچ سنہ انیس سو بانوے میں سر ایلٹن جان کے میوزک گروپ میں شامل ہوئے اور ان کے ساتھ چار میوزک ایلبمز میں کام کیا۔

واضح رہے کہ رابرٹ وائین برچ نے سر ایلٹن کے ساتھ بیس برس تک کام کیا اور ان کے ہمراہ مختلف ممالک میں میوزک کنسرٹس بھی کیے۔

سر ایلٹن جان نے ایک بیان میں کہا کہ انہیں رابرٹ وائین کی موت کی خبر سن کر بہت صدمہ پہنچا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میری ہمدریاں رابرٹ کی بیوی، ان کے بیٹے اور خاندان کے ساتھ ہیں۔

سر جان ایلٹن نے اپنی ویب سائیٹ پر جاری کیے گئے ایک بیان میں انہیں ’ایک عظیم ترین موسیقار‘ قرار دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے رابرٹ کے ہمراہ چودہ سو کنسرٹس کیے۔

ان کا کہنا تھا ’میرے پاس ان کی موت پر تبصرہ کرنے کے لیے الفاظ نہیں ہیں، میں ان سے بہت پیار کرتا تھا۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔