کراچی: موسیقار استاد قمر اللہ دتہ ہلاک

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 5 اکتوبر 2012 ,‭ 09:23 GMT 14:23 PST

قمر اللہ دتہ کا بی بی سی کے ساتھ آخری انٹرویو

قمر اللہ دتہ کا بی بی سی کے ساتھ آخری انٹرویو

دیکھئیےmp4

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

پاکستان کے صوبہ سندھ کے شہر کراچی میں نامعلوم افراد کی فائرنگ میں موسیقار استاد قمر اللہ دتہ ہلاک ہوگئے ہیں۔

پولیس نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ واقعہ فرقہ ورانہ دہشت گردی کا نتیجہ ہوسکتا ہے۔

جمعرات کی شب نشتر روڈ سے استاد قمر اللہ دتہ کی لاش ان کی کار میں سے ملی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں سر میں دو گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا ہے۔

46 سالہ استاد قمر لی مارکیٹ میں واقعے ایک امام بارگاہ کے ٹرسٹی تھے اور ان کی رہائش رضویہ سوسائٹی میں تھی۔ پولیس کے مطابق انہوں نے گھر والوں کو بتایا تھا کہ وہ امام بارگاہ جا رہے ہیں۔

کراچی پولیس کے مطابق پچھلے نو ماہ میں 1730 افراد کو قتل کیا گیا ہے جن میں تین سو سے زیادہ ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنے۔ شہر میں پچھلے دو ماہ سے فرقہ ورانہ بنیادوں پر ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے۔

استاد قمر اللہ دتہ گزشتہ دو دہائیوں سے موسیقی کی دنیا سے وابستہ تھے، انہوں نے اپنے کریئر کی ابتدا ریڈیو پاکستان سے کی، جہاں وہ گٹار بجاتے تھے۔ اس دوران انہیں مہدی حسن، عابدہ پروین اور ٹینا ثانی کے ساتھ کام کرنے کا بھی موقعہ حاصل ہوا۔

ان دنوں وہ نجی ٹی وی چینلز اور ایف ایم ریڈیو سٹیشن اور نیشنل اکیڈمی آف پرفارمنگ آرٹس سے وابستہ تھے، جہاں وہ نوجوانوں کو موسیقی کی تعلیم دیتے تھے۔

استاد قمر اللہ دتہ نامور موسیقار استاد جاوید اللہ دتہ کے قریبی رشتے دار تھے، موسیقی کےشعبے میں وہ ان کے سرپرست رہے۔

موسیقار ارشد محمود مقتول استاد قمر کے قریبی ساتھی ہیں، ان کا کہنا ہے کہ استاد قمر بہت فیورٹ موسیقار تھے۔

ارشد محمود کے مطابق استاد قمر ذاتی طور پر ہر دلعزیز، خاموش اور نفیس شخصیت تھے اور وہ ایسا فرد تھے جن پر اعتماد کیا جاسکتا تھا۔

استاد قمر پاکستان میں انتھاپسندی کے رجحان میں اضافے سے بھی رنجیدہ تھے، ان کا کہنا تھا کہ اس سے ثقافتی سرگرمیاں بری طرح متاثر ہو رہی ہیں۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔