شاہ رخ خان بمقابلہ اجے دیوگن

آخری وقت اشاعت:  منگل 6 نومبر 2012 ,‭ 12:10 GMT 17:10 PST
شاہ رخ خان

شاہ رخ خان اور قطرینہ کیف یش چوپڑہ پروڈکشن کی فلم 'جب تک ہے جاں' میں ہیں۔

بالی وڈ کے دو بڑے فنکاروں کی جنگ شاہ رخ خان بمقابلہ اجے دیوگن اب کھل کر سامنے آ گئی ہے اور میڈیا کی شہ سرخیوں میں آنے لگی ہے۔

یش چوپڑہ کے بینر تلے بنی شاہ رخ خان کی ’جب تک ہے جاں‘ اور اجے دیوگن کی ’سن آف سردار‘ دونوں فلمیں دیوالی کے موقعے پر ریلیز ہو رہی ہیں۔

بالی وڈ کے ایکشن سٹار اجے دیوگن نے الزام عائد کیا ہے کہ بالی وڈ کا یہ طاقتور پروڈکشن ہاؤس اپنے رتبے اور اثر و رسوخ کا غلط استعمال کر کے ملک کے زیادہ تر سینماگھروں پر قبضہ کر چکا ہے اور ان کی فلم کے لیے زیادہ سینما ہال نہیں بچے ہیں۔

اجے کے ان الزامات پر شاہ رخ خان نے کھل کر جوابی حملہ کیا اور کہا: ’یش راج بینر نے کسی کے ساتھ کوئی زیادتی نہیں کی۔ یہ کھلا بازار ہے، کسی کو کیا خریدنا ہے یہ تو اس خریدار پرمنحصر ہے۔ فلم چاہے بڑے فنکار کی ہو یا پھر کسی چھوٹے اداکار کی، بازار میں اس کا حشر خریدار یعنی ڈسٹری بيوٹرز کی مرضی پر منحصر ہے۔‘

اس کے ساتھ ہی شاہ رخ خان نے یہ بھی کہا کہ وہ کسی کی فلم کو کم شمار نہیں کر رہے ہیں اور چاہتے ہیں کہ دونوں فلمیں کامیاب ہوں۔

کیا کہنا چاہتے ہیں؟

"ان سب باتوں کے ذریعے آپ کیا ثابت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ کیا آپ یہ کہنے کہ کوشش کر رہے ہیں کہ اگر آپ کی فلم باکس آفس پر اچھا بزنس نہیں کرتی تو کیا اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ کو ہماری فلم کی وجہ سے اچھے سنیما گھر نہیں ملے"

شاہ رخ خان

اس تنازعہ پر پہلی بار کھل کر بولتے ہوئے شاہ رخ خان نے یہ بھی کہا: ’میں ان سب باتوں سے تھوڑا مایوس بھی ہوا ہوں۔ مجھے لگتا ہے کہ یہ سب بچپنا ہے۔ اس مسئلہ کا کیا حل ہے، میں نہیں جانتا۔ کیا کوئی مجھ سے یہ کہہ سکتا ہے کہ میں اپنی فلم جمعہ کو ریلیز نہ کروں۔ نہیں، میں ایسا نہیں کروں گا۔ اور نہ ہی آپ اپنی فلم کو روكیں گے۔ تو پھر ہم اس بارے میں بات کیوں کر رہے ہیں۔‘

اس بارے میں شاہ رخ خان کا کہنا ہے: ’ان سب باتوں کے ذریعے آپ کیا ثابت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ کیا آپ یہ کہنے کہ کوشش کر رہے ہیں کہ اگر آپ کی فلم باکس آفس پر اچھا بزنس نہیں کرتی تو اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ کو ہماری فلم کی وجہ سے اچھے سنیما گھر نہیں ملے۔ ان سب باتوں کا کیا مطلب ہے۔‘

شاہ رخ خان نے اس بارے میں یہ بات بھی کہی کہ ’سن آف سردار‘ کی ٹیم اتنی دیر سے کیوں بیدار ہوئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ فلمسازوں نے پہلے سے ہی سنیما گھر کیوں بک نہیں کئے۔اگر ہم نے اپنی بکنگ پہلے ہی کر لی تو کیا یہ ہماری غلطی ہے۔

اجے دیوگن فلمز نے یش راج بینر کے اس ’رویہ‘ کے خلاف بھارتی مقابلہ جاتی کمیشن میں بھی شکایت کی تھی لیکن ان کی اس شکایت کو مسترد کر دیا گیا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔