سیاسی مہم کے لیے’بگ باس‘ کو الوداع

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 9 نومبر 2012 ,‭ 12:42 GMT 17:42 PST

سدھو کو شو چھوڑنے کی اجازت دے دی گئی ہے: چینل حکام

بھارتی کرکٹ ٹیم کے سابق رکن اور موجودہ رکنِ اسمبلی نوجوت سنگھ سدھو کو انتخابی مہم میں حصہ لینے کے لیے نجی ٹی وی پر نشر کیے جانے والے ریئلیٹي شو بگ باس کو الوادع کہنا پڑا ہے۔

سدھو اس پروگرام میں ایک مہینہ گزار چکے ہیں اور اب ان کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کو ان کی خدمات درکار ہیں۔

سدھو کی اہلیہ کا کہنا ہے کہ ان کی پارٹی چاہتی ہے کہ سدھوگجرات انتخابات کے دوران انتخابی مہم میں حصہ لیں۔

نوجوت کور نے خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا،’ کل تک مجھے اس بات کا یقین تھا کہ وہ شو پر طویل وقت تک رہیں گے لیکن آج مجھے پارٹی سربراہ نتن گٹکری کی طرف سے فون آیا کہ گجرات میں انتخابی مہم کے لیے پارٹی کو سدھو کی ضرورت ہے‘۔

نوجوت کور نے یہ بھی کہا کہ گجرات کے وزیراعلیٰ نریندر مودی نے بھی خاص طور پر اپیل کی ہے کہ انہیں گجرات انتخابات میں سدھو کی بے حد ضرورت ہے اس لیے وہ جلد از جلد بگ باس سے باہر آ جائیں۔

نوجوت کور کے مطابق گٹکری سے بات کرنے کے بعد انہوں نے ٹیلی ویژن چینل سے بات کی اور انہیں امید ہے کہ سدھو گجرات تشہیر کے لیے حامی بھر لیں گے۔

نوجوت کور کے مطابق سدھو اپنی پارٹی سے اجازت لینے کے بعد ہی بگ باس میں گئے تھے۔

ٹی وی چینل کے مطابق سدھو کی اہلیہ کی درخواست کے بعد نوجوت سنگھ سدھو سے بات کی گئی اور انہیں شو چھوڑنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

نوجوت کور کے مطابق سدھو کے لیے پارٹی کی ذمہ داریاں ذاتی تشہیر سے بڑھ کر ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔