بھارت بہت ’بولڈ‘ ملک ہے: انوشکا

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 21 دسمبر 2012 ,‭ 00:30 GMT 05:30 PST

انوشکا کہتی ہیں کہ فلم میں ان کا کردار ان کی اصل زندگی سے بالکل مختلف ہے

اداکارہ انوشکا شرما اس نتیجے پر پہنچی ہیں کہ بھارت بہت ’بولڈ‘ ملک ہے۔ لیکن وہ اس نتیجے پر کیسے پہنچیں؟

انوشکا کا کہنا ہے ’بھارت کی آبادی 120 کروڑ ہے۔ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ بھارت ایک بولڈ ملک ہے۔‘

لیکن انوشکا نے یہ بات کس تناظر میں کہی یہ وہ جانیں۔ دراصل ان کی آنے والی فلم میں عمران خان اور انوشکا شرما کے درمیان ایک كسنگ سین ہے۔

جب بی بی سی نے انوشکا سے سوال کیا کہ کیا اس طرح کے بولڈ سین کرتے ہوئے شوٹنگ کے وقت انہیں کسی طرح کی کوئی پریشانی تو نہیں ہوئی، تو ان کا جواب تھا ’مجھے سمجھ میں نہیں آتا کہ بھارت جیسے بولڈ ملک میں لوگ کسنگ کے منظر کو لے کر اتنا ہنگامہ کیوں کرتے ہیں؟ 120 کروڑ کی آبادی والے ملک میں کسنگ سین کو بولڈ کہنا بڑا مزاحیہ لگتا ہے۔‘

انوشکا نے مزید کہا ’كسنگ سین جیسے پردے پر دکھائی دیتا ہے، دراصل ویسا شوٹنگ کے وقت ہوتا نہیں۔ شوٹنگ بڑے مشینی انداز میں ہوتی ہے۔ کیمرہ مین آ کر بتاتا ہے کہ شاٹ کس زاویے سے لینا ہے، لائٹنگ کیسی ہوگی، وغیرہ۔ كسنگ سین فلماتے وقت کوئی جذبات نہیں ہوتے۔‘

انوشکا کی آنے والی فلم ’مٹرُو کی بجلی کا منڈولا‘ کے ہدایتکار وشال بھردواج ہیں۔ فلم میں انوشکا ’بجلی‘ نام کی ایک بگڑی ہوئی امیر لڑکی کا کردار ادا کر رہی ہیں۔

وہ کہتی ہیں کہ فلم میں ان کا کردار ان کی اصل زندگی سے بالکل مختلف ہے۔

’میرے والد فوجی ہیں۔ بچپن سے ہی میں بہت ڈسپلنڈ قسم کی لڑکی رہی ہوں۔ لیکن اس فلم میں میں بہت بگڑی ہوئی اور شیطان لڑکی ہوں جس میں کئی خامیاں ہیں۔ اس کردار کو ادا کرنا میرے لیے بڑا چیلنج تھا۔‘

عمران اور انوشکا کے علاوہ فلم میں پنکج کپور کا بھی اہم کردار ہے۔ فلم گیارہ جنوری کو ریلیز ہو رہی ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔