منٹو غالب کا پرستار، پرویز انجم کی کتاب

آخری وقت اشاعت:  بدھ 16 جنوری 2013 ,‭ 00:16 GMT 05:16 PST
منٹو غالب کا پرستار

نام کتاب: منٹو غالب کا پرستار

مصنف: پرویز انجم

صفحات: 191

قیمت: 300 روپے

ناشر: مثال پیبلشرز، رحیم سینٹر، پریس مارکیٹ، امین پور بازار، فیصل آباد

منٹو صدی کے حوالے سے کتابوں کی آمد جاری ہے۔ جس سے جس طرح ممکن ہو رہا ہے سعادت حسن منٹو کے نئے پہلو اجاگر کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

پرویز انجم کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انھوں نے اپنی زندگی کا بڑا حصہ منٹو پر تحقیق کرنے میں گذارا ہے۔ ’منٹو: غالب کا پرستار‘ اس حوالے سے ان کی پہلی کتاب ہے جو شائع ہوئی ہے۔

یہ بھی کہا جاتا ہے کہ ان کی مزید کتابیں شائع ہونے والی ہیں جن میں ’منٹو اور سینما‘، ’منٹو نامے‘ غالبًا منٹو کے خطوط، اور ’منٹو باتیں‘ منٹو کے انٹرویوز پر مشتمل ہو گی۔

اس کے علاوہ وہ ایک اور کتاب پر بھی کام کر رہے ہیں جو ’اردو ادیب اور سینما‘ کے نام سے ہو گی۔

منٹو پر تحقیق کے علاوہ انھوں نے افسانے لکھے ہیں اور ان کا افسانوں کا پہلا مجموعہ ’مونگرے کے پھول‘ کے نام سے شائع ہوا ہے۔ افسانوں کا ایک اور مجموعہ ’ایک موسم‘ کے نام سے زیر اشاعت بتایا جاتا ہے۔

روزگار کے سلسلے میں وہ پاکستان کے علاوہ کئی ممالک میں رہے ہیں اور کہا جاتا ہے کہ اس مسافرت نے انھیں مشاہدے کے جو مواقع فراہم کیے ہیں اس کے نتیجے میں ان کے تخلیقی شعور میں گہرائی پیدا ہوئی ہے۔

کتاب کی اولین تحریر یا تعارف کے طور پر ڈاکٹر طارق ہاشمی نے لکھا ہے کہ:

’کتاب کا حصہ اوّل منٹو کی غالب کے حوالے سے چھ تحریروں پر مشتمل ہے اور حصہ دوم منٹو کی فلم ’مرزا غالب‘ کے اسکرپٹ سے مزیّن ہے جو تحریری شکل میں ایک ادبی حیثیت اختیار کر جائے گا۔ مرتب کی اس کاوش کو یقینًا تحسین کی نگاہ سے دیکھنا چاہیے۔ جواہرات منٹو، حصہ اوّل کے مضامین اور ڈرامے، غالب پر سعادت حسن منٹو کی تحریریں کچھ افسانوی اور کچھ نیم افسانوی ہیں اور تاریخی دستاویز کی حیثیت رکھتی ہیں۔ ان کی اہمیت کیا ہے، اس پر اردو تحقیق و تنقید کے میدان میں بہت کچھ لکھا جائے گا۔ یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ پرویز انجم کی یہ کتاب اپنے اندر اہم تحقیق مواد رکھتی ہے۔ تاہم پرویز انجم نے منٹو کے غالب نوادرات کے اس زریں ذخیرے کو دریافت کر کے منٹو شناسوں کے سامنے بعض سوالات ضرور رکھے ہیں اور یہ یقینًا ایک فرض بھی تھا جو انھوں نے بہ اسلوبِ احسن نبھایا ہے اور یہ ایک قرض بھی تھا جو پرویز انجم نے وقت، محنت اور نقد کے بہت سے دام دان کر کے چکایا ہے‘۔

حصہ اوّل میں میں منٹو کے چھ مضمون ہیں:

آگرہ میں مرزا نوشہ کی زندگی، غالب اور چودھویں، - غالب، چودھویں اور حشمت خان، غالب اور سرکاری ملازمت، قرض کی پیتے تھے ۔ ۔ ۔ اور مرزا غالب کی حشمت خان کے گھر دعوت۔

منٹو اور غالب دروبیں شخصیات

"غالب اور منٹو دروں بیں شخصیات تھیں مگر اپنے گمان سے نکل کر جب انھوں نے چشمِ تنگ کو کثرتِ نظارہ سے وا کیا تو ان کی خیال پرستی زندگی کی تخیلی ترجمان بن گئی۔ دونوں کی زندگیاں احساس محرومی سے عبارت ہیں مگر اس احساسِ محرومی میں بھی زندگی کی خواہش ان کے دل سے نہیں نکلتی اور ولولوں کے چراغ جلتے رہتے ہیں"

پرویز انجم

اس کے علاوہ اس کتاب میں خود پرویز انجم کے دو مضمون ہیں جن میں پہلا ’منٹو، غالب کا پرستار‘ کے عنوان سے ہے۔ اور دوسرا اس فلم کے سکرپٹ کے حوالے سے ہے جو منٹو نے غالب کی زندگی کے بارے میں لکھا۔ دونوں مضمون دلچسپ ہیں۔

ان دونوں مضامین میں پرویز انجم نے منٹو کے حوالے سے غالب کی اور غالب کے حوالے سے منٹو کی زندگی اور فن پر بات کی ہے اور بعض جگہ بہت دلچسپ تبصرے بھی کیے ہیں:

’غالب اور منٹو دروں بیں شخصیات تھیں مگر اپنے گمان سے نکل کر جب انھوں نے چشمِ تنگ کو کثرتِ نظارہ سے وا کیا تو ان کی خیال پرستی زندگی کی تخیلی ترجمان بن گئی۔ دونوں کی زندگیاں احساس محرومی سے عبارت ہیں مگر اس احساسِ محرومی میں بھی زندگی کی خواہش ان کے دل سے نہیں نکلتی اور ولولوں کے چراغ جلتے رہتے ہیں‘۔

ایسے بہت تبصرے ان کے مضامین میں موجود ہیں۔ اس کے علاوہ انھیں گاڑھی اردو لکھنے سے بھی شوق ہے جو نہ تو منٹو کا شیوہ تھا نہ غالب کی پسند۔

لیکن اصل بات وہی ہے جس کی طرف ڈاکٹر طارق ہاشمی نے اشارہ کیا ہے کہ پرویز انجم نے منٹو کی سات تحریروں کو ایک جگہ کر کے ایک ایسا اہم کام کیا جو منٹو پر کام کرنے والوں کے لیے خاصا مددگار ہوگا اور وہ اس سے ضرور فائدہ اٹھائیں گے۔

کتاب انتہائی عمدہ شائع ہوئی ہے اور قیمت بھی انتہائی مناسب ہے۔ اس کتاب کی تزئین عدالحفیظ نے کی ہے اور خیال ہے کہ ٹائیٹل بھی ان کا بنایا ہوا ہے۔ اگر ان کا نہیں تو بھی بہت عمدہ، سادہ اور متوجہ کرنے والا ہے۔

ادب پڑھنے والے بہت لوگوں کے لیے یہ کتاب اس لیے اہم ہے کہ اس کے ذریعے سعادت حسن منٹو کی وہ تحریریں ایک جگہ جمع ہوئی ہیں جو پہلے ایک جگہ نہیں تھیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔