گلوکارہ مہناز بیگم انتقال کر گئیں

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 19 جنوری 2013 ,‭ 15:09 GMT 20:09 PST

مہناز نے ریڈیو، ٹی وی اور فلموں کے لیے ڈھائی ہزار سے زائد گانےگائے

پاکستانی فلموں میں ایک طویل عرصے تک اپنی آواز کا جادو جگانے والی گلوکارہ مہناز بیگم انتقال کر گئی ہیں۔

پاکستان کے سرکاری ٹی وی کے مطابق وہ کافی عرصے سے بیمار تھیں اور انہیں علاج کے لیے کراچی سے امریکہ منتقل کیا جا رہا تھا کہ دورانِ پرواز ان کی طبعیت بگڑ گئی۔

اس صورتحال میں جہاز کو بحرین میں اتارا گیا اور انہیں مناما کے مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ سنیچر کو چل بسیں۔

انیس سو اٹھاون میں کراچی میں پیدا ہونے والی مہناز کو گلوکاری کا فن ورثے میں ملا تھا۔ ان کی والدہ کجن بیگم بھی برصغیر کی نامور گلوکارہ تھیں۔

مہناز نےگلوکاری کا آغاز دورانِ تعلیم ہی کر دیا تھا اور انہوں نے ریڈیو، ٹی وی اور فلموں کے لیے ڈھائی ہزار سے زائد گانےگائے۔

انہوں نے انیس سو ستّر کی دہائی میں میں ریڈیو پاکستان سے گلوکاری شروع کی اور پاکستان ٹی وی پر موسیقار سہیل رعنا نے انہیں متعارف کروایا۔

جلد ہی ان کی شہرت ٹی وی سنٹر سے فلم انڈسٹری تک پھیل گئی اور پھر وہ پاکستان کی ایک بہترین پلے بیک سنگر کے طور پر سامنے آئیں۔

وہ غزل اور ٹھمری کی گائیکی میں نمایاں مقام رکھتی تھیں اور انہوں نے پاکستان کی فلمی صنعت کے دورِ عروج میں مہدی حسن کے ساتھ مل کر بھی متعدد یادگار گانے گائے۔

اس کے علاوہ مہناز نے محرم الحرام کے حوالے سے ٹی وی اور ریڈیو پر سینکڑوں نوحے اور مرثیے بھی پڑھے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔