روی شنکر کے لیےگریمی ایوارڈ

آخری وقت اشاعت:  پير 11 فروری 2013 ,‭ 02:35 GMT 07:35 PST

ممفورڈ اینڈ سنز کے مارکس انعامی ٹرافی کے ساتھ

امریکی شہر لاس اینجلس میں ہوئے پچپن ویں گریمی ایوارڈ میں گوٹی اور ممفورڈ اینڈ سنز نے بیشتر ایوارڈ جیتے ہیں۔

ممفورڈ اینڈ سنز کو اس کے البم ’بابیل‘ کو اس برس کے بہترین البم کے خطاب سے نوازا گيا۔

فن کے ترانے’ہم نوجوان ہیں‘ کو اس برس کا بہترین نغمہ قرار دیا گيا ہے اور نیویارک بینڈ نے اس برس کے نئے بہترین فنکار کا خطاب حاصل کیا۔

گریمی ایوارڈ کی تقریبات سے پہلے ممفورڈ اینڈ سنز کو چھ زمروں میں نامزد کیا گيا تھا لیکن انعامی تقریب میں اسے دوسرا انعام اس کے طویل فارمیٹ کے میوزک ویڈیو کے لیے ہی ملا۔

انڈی راک گروپ ’دی بلیک کیز‘ کو مجموعی طور پر زبردست کامیابی ملی۔ اسے چھ زمروں میں نامزد کیا گيا تھا جس میں سے اسے چار ایوارڈ حاصل ہوئے۔

تقریب سے پہلے کے ایوارڈ حاصل کرنے والوں میں بھارت سے تعلق رکھنے والے آنجہانی ستار نواز پنڈت روی شنکر کے لیے بھی ایوارڈ تھا جنہیں بہترین عالمی موسیقی کے البم کا ایوارڈ دیا گیا جو ان کی بیٹی انوشکا نے وصول کیا۔

انوشکا شنکر نے ایوارڈ وصول کرنے کے بعد کہا کہ ’کاش وہ اس موقع پر یہاں خود اس ایوارڈ کو وصول کرنے کے لیے ہوتے۔‘

اکتیس سالہ انوشکا اپنے والد کے ساتھ اسی درجہ بندی میں نامزد ہوئی تھیں۔ یاد رہے کہ پنڈت روی شنکر کا انتقال گزشتہ سال دسمبر میں ہوا تھا۔

برطانوی گلوکارہ ایڈیل کو بہترین سولو پاپ گانے کا ایوارڈ ان کے گانے ’سیٹ فائر ٹو دی رین‘ کے لائیو ورژن پر دیا گیا

گریمی ایوارڈز کی تقریب کا آغاز امریکی گلوکارہ ٹیلر سوِفٹ کے ہِٹ گانے ’وی آر نیور ایور گیٹنگ بیک ٹو گیدر‘ سے ہوا۔

تئیس سالہ گلوکارہ کے ساتھ فنکاروں ’وائٹ ریبٹ‘ اور ’ہیومن پپٹ‘ نے ایلس ان ونڈر لینڈ کے تھیم پر فن کا مظاہرہ کیا۔

اس تقریب کی میزبانی ریپر ’ایل ایل کول جے‘ کر رہے تھے جنہوں نے آغاز میں کہا ’ آپ سب کو موسیقی کی دنیا کے سب سے بڑے شو میں خوش آمدید‘۔

ایڈ شیران اور سر ایلٹن جان بھی اس تقریب میں شرکت کے لیے پہنچے ہیں اور اپنے فن کا مظاہرہ بھی کیا۔

برطانوی گلوکارہ ایڈیل گریمی کی بنیادی تقریب کی فاتح تھیں جنہوں نے بہترین سولو پاپ گانے کا ایوارڈ جیتا جو انہیں اپنے گانے ’سیٹ فائر ٹو دی رین‘ کے لائیو ورژن پر دیا گیا۔

ایڈیل نے ایوارڈ وصول کرنے کے بعد اپنی ساتھی گلوکاراؤں کو خراج تحسین پیش کیا جن میں ریانہ اور کیٹی پیری شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’ہم سب بہت محنت کرتی ہیں مگر ایسے ظاہر کرتی ہیں جیسے یہ بہت آسان کام ہو۔‘

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔