چین میں بی بی سی انگلش کی نشریات بلاک

آخری وقت اشاعت:  پير 25 فروری 2013 ,‭ 17:19 GMT 22:19 PST

بی بی سی کوحالیہ سالوں میں کئی دفعہ سیٹیلائٹ سروس بند ہونے کا سامنا کرنا پڑھا ہے

بی بی سی کی ورلڈ سروس کا کہنا ہے کہ چین میں منظم طریقے سے شارٹ ویو پر جانے والی انگریزی کی نشریات کی فریکوئنسی جام کی جا رہی ہے۔

بی بی سی کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ابھی تک یہ ممکن نہیں ہو سکا کہ انگلش سروس ریڈیو کو کہاں سے بلاک کیا گیا ہے۔

بیان کے مطابق’بھرپور اور مربوط کوششیں چین جیسے وسائل سے مالا مال ملک کی طرف اشارہ کرتی ہیں۔‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ’بی بی سی اس اقدام کی شدید مذمت کرتا ہے جس کا مقصد سامعین کو آزاد ذرائع ابلاغ سے خبروں اور معلومات تک رسائی سے روکنا ہے۔‘

بی بی سی گلوبل نیوز کے ڈائریکٹر پیٹر ہورکس کے مطابق چین میں جام ہونے سے بی بی سی کے انگلش سروس کی نشریات بری طرح متاثر ہوئیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ’چین اور ایران میں بی بی کی نشریات کو روکنے کے لیے حکام کی مربوط کوششوں سے اندازہ ہوتا ہے کہ بی بی سی دنیا بھر میں سامعین کو غیر جانبدار اور صحیح معلومات دینے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔‘

بی بی سی کو حالیہ سالوں میں کئی دفعہ سیٹلائٹ سروس بند ہونے کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

ان کے مطابق شارٹ ویو کم ہی بند ہوئے ہیں۔تاہم ایران میں بی بی سی فارسی کی سروس کو بندش کا سامنا کرنا پڑا ہے اور تاریخی اعتبار سے سرد جنگ کے دوران بی بی سی کی تشریات بند کی جاتی تھیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔