سنجے کے بغیر ’منّا بھائی‘ کا تصور نہیں

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 23 مارچ 2013 ,‭ 10:35 GMT 15:35 PST

بالی وڈ راؤنڈ اپ

بالی وڈ راؤنڈ اپ

سنئیےmp3

اس مواد کو دیکھنے/سننے کے لیے جاوا سکرپٹ آن اور تازہ ترین فلیش پلیئر نصب ہونا چاہئیے

متبادل میڈیا پلیئر چلائیں

سیف علی خان کو غصہ کیوں آتا ہے؟

سیف علی خان

سیف علی خان کی نئی فلم 'بلیٹ راجا' کی شوٹنگ جاری ہے

سیف علی خان بھارتی ریاست اترپردیش کے دارالحکومت لکھنؤ کے ہوائی اڈے پر ایک بار پھر ایک تنازع میں شامل ہو گئے۔

اپنی فلم ’بلیٹ راجا‘ کی شوٹنگ کے سلسلے میں سیف گزشتہ دنوں لکھنؤ پہنچے اور ایئرپورٹ کے وی آئي پی لاؤنج میں جا بیٹھے۔ ایئر پورٹ کے حکام نے انہیں باہر جانے کی گزارش کی کیونکہ ان کا نام وی آئی پی کی فہرست میں نہیں تھا۔ اسی بات پر سیف علی خان کو غصہ آ گیا اور ان کی جھڑپ ہو گئی۔

کافی سمجھانے کے بعد سیف علی خان وہاں سے باہر آئے اور عام مسافر کی طرح فلائٹ کا انتظار کیا۔ اس سے قبل ایک فائیوسٹار ہوٹل میں بھی وہ ایک مہمان سے الجھ پڑے تھے۔

سنجے دت کے بغیر منّا بھائی-تھری نہیں بنے گی

سنجے دت

سنجے دت پر اس سے قبل بھی مقدمہ چلا تھا اور جیل بھی ہوئی تھی

جمعرات کی صبح آئے کورٹ کے فیصلے سے پورے بالی وڈ میں سنّاٹا چھا گیا کہ سنجے دت کو ایک بار پھر جیل جانا ہوگا اور ساڑھے تین سال وہاں گزارنے ہونگے۔

ان کی مشہور فلم ’منّا بھائی‘ کے تیسرے سیکوئل پر کام شروع ہونے والا تھا۔ امید کی جا رہی تھی کہ سنجے دت ایک بار پھر منّا بھائی کے کردار میں نظر آئیں گے لیکن ان کے جیل جانے کی خبر سے چیزیں بدل گئیں۔

اس فلم کے ہدایت کار سبھاش کپور نے بی بی سی بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ سنجے کے بغیر ’منّا بھائی‘ کے بارے میں تصور بھی نہیں کیا جا سکتا اور میں ساڑھے تین سال انتظار کرنے کے لیے تیار ہوں، ان کے جیل سے آنے کے بعد ہی ’منّا بھائی‘ بنے گی۔

سنجے دت پر تقریباً 80 کروڑ روپے لگے ہوئے ہیں اور فلم ’زنجیر‘ اور ’پی کے‘ جیسی فلموں میں کام کر رہے تھے اور ان کی شوٹنگ ابھی مکمل نہیں ہوئی تھی۔

سلمان خان صحت مند ہیں

سلمان خان

سلمان خان گزشتہ دنوں بھی علاج کی خاطر امریکہ گئے تھے

اپنے علاج کے سلسلے میں امریکہ میں موجود سلمان خان اب چین کا سانس لے سکتے ہیں۔ ڈاکٹر نے انہیں تندرست اور صحت مند قرار دیا ہے اور دوسری سرجری نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

دو سال قبل سلمان خان کو ’نیورالجیا‘ مرض کی تشخیص ہوئی تھی جس کے بعد علاج کی خاطر انھوں نے ایک سرجری کرائی تھی اور وہ اس کے لیے مستقل دوائیں استعمال کر رہے تھے۔ اب نئے چیک اپ کے بعد ڈاکٹروں نے کہا ہے کہ ان کی تکلیف میں اضافہ نہیں ہوا ہے اور صورت حال قابو میں ہے اس لیے مزید سرجری کی ضرورت نہیں ہے۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔