جیکی چن کے ہالی وڈ میں ہاتھوں کے نشان

Image caption اس تھیئٹر میں ہالی وڈ کے شہرہ آفاق ستاروں کے نشانات موجود ہیں

مارشل آرٹ فلموں کے اداکار جیکی چن نے ہالی وڈ کے چائینیز تھیئٹر میں دوسری بار گیلی سیمنٹ میں اپنے ہاتھوں اور پیروں کے نشان چھوڑے ہیں۔

اس سے قبل ان کے پہلے نشان ضائع ہو گئے تھے۔

59 سالہ فلم سٹار نے پہلی بار 1997 میں یہاں اپنے نشان بنائے تھے، لیکن سیمنٹ کی وہ سل جس پر جیکی چین کے نشانات تھے، وہاں سے غائب ہو گئی ہے۔

انھوں نے جمعرات کو کہا، ’12 برس قبل میں نے ہاتھ کا نشان چھوڑا تھا لیکن کسی نے اسے چرا لیا۔ یہ دوسری بار ہے، اور میں آپ کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔‘

تاہم چائینیز تھیئٹر کے نمائندوں نے کہا کہ انھیں یہ نہیں معلوم کہ پہلے نشان کب غائب ہوئے، تاہم انھیں یقین ہے کہ وہ سل چوری نہیں ہوئی۔

ان سلوں کو اکثر ہٹا کر سٹور میں رکھ دیا جاتا ہے تا کہ نئی سلوں کے لیے جگہ بنائی جا سکے۔

جیکی چن نے مداحوں کو بتایا کہ انھوں نے پہلی بار اپنے نشان چھوڑنے کا خواب اس وقت دیکھا تھا جب وہ 1993 میں سلویسٹر سٹالون کے اعزاز میں منعقد کی جانے والی ایک تقریب میں مدعو تھے۔

انھوں نے کہا: ’میں نے جب چائینیز تھیئٹر میں سرخ قالین پر پہلی بار قدم رکھا ۔۔۔اور اتنے ستاروں کو بیک وقت دیکھا۔ اس وقت میرے پاس کرنے کو کچھ نہیں تھا۔ میں کھڑا سب کو دیکھتا رہا‘۔

’ان تمام برسوں کے دوران میرا خواب زندہ رہا۔ اور بالآخر میں منزل پر پہنچ گیا۔‘

جیکی چن اب تک ایک سو سے زائد فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھا چکے ہیں۔

چین وہ پہلے ستارے ہیں جن کے نشان دو دفعہ لیے گئے ہیں۔ فلم ’رش آور‘ میں ان کے ساتھ کام کرنے والے اداکار کرس ٹکر اور ’کراٹے کڈ‘ کے جیڈن سمتھ بھی اس موقعے پر موجود تھے۔

ٹکر نے کہا: ’اس فلم میں ان کے ساتھ کام کرنا اعزاز کی بات تھی۔ وہ میرے استاد اور بڑے بھائی ہیں۔ وہ دنیا کے سب سے اچھے انسان ہیں۔‘

چن پہلے چِین کے سب سے بڑے فلم سٹار بنے۔ پھر وہ کنگ فو کی مہارت اور اپنے سٹنٹ خود کرنے کی صلاحیت لے کر ہالی وڈ پہنچے۔ اس سے قبل وہ افسانوی شہرت کے حامل اداکار بروس لی کے ساتھ کام کر چکے تھے۔

گذشتہ ماہ کان فلمی میلے میں انھوں نے کہا تھا کہ بےشمار چکناچور ہڈیوں اور ٹوٹے ہوئے دانتوں کے بعد وہ سٹنٹ کا کام چھوڑ رہے ہیں تاہم انھیں امید ہے کہ وہ اداکاری جاری رکھیں گے۔

چائینیز تھیئٹر میں ہالی وڈ کے شہرہ آفاق ستاروں کے نشانات موجود ہیں جن میں میریلن منرو، کلارک گیبل اور ہمفری بوگارٹ شامل ہیں۔

اسی بارے میں