’دا ففتھ اسٹیٹ‘ سنہ 2013 کی فلاپ ترین فلم

Image caption یہ فلم جولین اسانژ کی زندگی پر مبنی ہے لیکن انھوں نے اپنے آپ کو اس فلم سے دور رکھتے ہوئے اسے ’بے بنیاد جھوٹ پر مبنی نیچ کام‘ قرار دیا تھا

فوربز میگزین کے مطابق ہالی وڈ میں وکی لیکس پر بننے والی ’دا ففتھ اسٹیٹ‘ سنہ 2013 کی فلاپ ترین فلم ہے۔

میگزین نے جولین اسانژ پر بنی فلم کے دو کروڑ 80 لاکھ امریکی ڈالر بجٹ کا موازنہ اس کی دنیا بھر میں کمائی سے کیا جو کہ 60 لاکھ امریکی ڈالر ہے۔

میگزین کے مطابق بینیڈکٹ کمبربیچ کی بنائی ہوئی اس فلم نے اس پر آنے والے خرچ کا صرف 21 فیصد کمایا۔

جولین اسانژ نے اپنے آپ کو اس فلم سے دور رکھتے ہوئے اسے ’بے بنیاد جھوٹ پر مبنی نیچ کام‘ قرار دیا تھا۔

راز افشا کرنے والے وکی لیکس ویب سائٹ کے بانی جون سنہ 2012 سے لندن میں ایکواڈور کے سفارت خانے میں پناہ گزین ہیں۔

سلویسٹر سٹالون کی فلم ’بلٹ ٹو دا ہیڈ‘ اور ہیریسن فورڈ کی فلم ’پیرانویا‘ بالترتیب دوسری اور تیسری فلاپ ترین فلمیں ہیں۔

اس فہرست میں جیسن سٹیتھم کی ’پارکر‘ اور مارک واہلبرگ کا سیاسی ڈرامہ ’بروکن سٹی‘ چوتھے اور پانچویں نمبر پر ہیں۔

مافوق الفطرت مزاحیہ فلم ’آر آئی پی ڈی‘ نے اپنے بحٹ کا صرف 60 فیصد کمایا اور نویں نمبر پر ہے۔

ڈزنی سٹوڈیو کی ’دا لون رینجر‘ کو فلاپ فلموں کی فہرست میں جگہ نہیں دی گئی کیونکہ باکس آفس میں ناکامی کے باجود اس نے اپنے بجٹ سے زیادہ کمائی کی ہے۔ میگزین کے مطابق یہ فلم بے شک ناکام ہوئی ہے لیکن اس نے اپنے بجٹ سے زیادہ رقم کمائی ہے۔

فلم نے دو کروڑ 60 لاکھ امریکی ڈالر کمائے جبکہ اس کا بجٹ دو کروڑ 15 لاکھ امریکی ڈالر تھا۔

اس فہرست کو تیار کرنے میں فلموں کی مارکیٹنگ پر آنے والے خرچے کو شمار نہیں کیا گیا ہے جو میگزین کے مطابق بعض اوقات فلم پر آنے والے اخراجات کے برابر ہوتا ہے۔

اسی بارے میں