نجی زندگی پر رائے زنی سے گریز بہتر: ایشوریہ

Image caption لوگوں کو اپنے رشتوں کے بارے میں فیصلہ کرنے کا حق ہے:ایشوریہ

بالی وڈ کی اداکارہ اور سابق ملکۂ حسن ایشوریہ رائے بچن کا کہنا ہے کہ فلمی دنیا سے وابستہ شخصیات کی نجی زندگی کے بارے میں رائے زنی سے گریز کیا جانا چاہیے۔

انھوں نے یہ بات ایسے موقع پر کہی ہے جب ذرائع ابلاغ میں اداکار ریتک روشن اور ان کی بیوی سوزین کی علیحدگی کا معاملہ چھایا رہا ہے اور اس سے پہلے ہدایت کار انوراگ کشیپ اور ان کی بیوی كالکی کے درمیان بھی کشیدگی کی خبریں بھی میڈیا میں گرم تھیں۔

ممبئی میں ایک تقریب میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے ایشوریہ رائے بچن نے مداحوں سے گزارش کی کہ اس معاملے میں لوگوں کو کسی بھی طرح کی رائے دینے سے بچنا چاہیے۔

ایشوریہ نے کہا: ’رشتے بنتے بگڑتے رہتے ہیں۔ اسے صرف بالی وڈ تک ہی محدود کر کے دیکھنا ٹھیک نہیں اور لوگوں کو اپنے رشتوں کے بارے میں فیصلہ کرنے کا حق ہے۔ انہیں اس سلسلے میں اکیلا چھوڑ دینا چاہیے۔‘

ماں بننے کے بعد ایشوریہ رائے فی الحال فلموں سے دور ہیں لیکن انہوں نے کہا کہ ان کے لیے راستے کھلے ہیں۔

تقریب میں ایشوریہ پہلے سے زیادہ ’فٹ‘ نظر آ رہی تھیں تاہم اپنی خوبصورتی کا کریڈٹ انہوں نے اپنے والدین کو دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ’شاید مجھے خوبصورتی وراثت میں ملی۔ میرا اپنا کوئی کمال نہیں ہے۔ جو لوگ مجھ سے بیوٹی ٹپس مانگتے ہیں ان سے یہی كہوں گي کہ وہ اپنے کام کے تئیں، رشتوں کے معاملے میں ایماندار رہیں۔ ذہن میں مثبت خیالات لائیں اور بڑوں کی عزت کریں، چہرے پر چمک خود بخود آئے گی۔‘

انہوں نے اپنے ماں بننے کے تجربے کو بہترین قرار دیا اور کہا کہ وہ اپنی بیٹی ارادھيا کے ساتھ بہت اچھا وقت گزار رہی ہیں۔

ایشوریا رائے بچن کی آخری فلم سنہ 2010 میں سنجے لیلا بھسالي کی ’گزارش‘ تھی جس میں انھوں نے ریتک روشن کے ساتھ کام کیا تھا۔

اس کے بعد انہوں نے مدھر بھنڈارکر کی فلم ’ہیروئن‘ سائن کی تھی لیکن حاملہ ہونے کی وجہ سے انہیں یہ فلم چھوڑنا پڑی تھی۔

اسی بارے میں