بھارتی اداکار فاروق شیخ انتقال کر گئے

Image caption فاروق شیخ اور دیپتی نول کی جوڑی متوازی سینیما کی بہترین جوڑیوں میں شمار ہوتی ہے

ہندی فلموں کے معروف اداکار فاروق شیخ دل کا دورہ پڑنے سے 65 سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔ وہ گزشتہ کچھ دنوں سے بیمار تھے۔

ان کے اہل خانہ نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے ان کی موت کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ یہ انتہائی افسوسناک واقعہ ہے۔

ان کی موت سے پورے بالی وڈ میں رنج و غم کی لہر دوڑ گئی ہے۔

انھیں متوازی سینیما کے اہم اداکار کے طور پر یاد کیا جاتا ہے۔

انھوں نے یادگار فلم ’امراؤجان‘ اور ’بازار‘ جیسی انتہائی مقبول فلموں میں اپنی منفرد اداکاری کا جوہر دکھایا۔

’لسن امايا‘ فلم کے ہدایت کار اویناش سنگھ نے بی بی سی کو بتایا ’وہ اداکار نہیں پرفامر تھے، فنکار تھے۔ جب سے میں پیدا ہوا ہوں تب سے میں نے کسی کو نہیں دیکھا کہ کوئی بھی ان کی طرح فطری اداکاری کر سکتا ہے۔ فلم کی شوٹنگ کے دوران وہ ہمیشہ پانچ منٹ پہلے آ جاتے تھے۔ وہ جب روزے رکھتے تھے تو اپنے ساتھیوں کا بھی خیال رکھتے تھے۔ یہاں تک کہ ایک ساؤنڈ انجینیئر کے ساتھ وہ افطار کرتے تھے تو ان کے لیے بھی پھل اور کھجور لاتے تھے۔‘

فاروق شیخ کا حالیہ انٹرویو

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

فلم ’شطرنج کے کھلاڑی‘ میں فاروق کے ساتھ کام کرنے والے وکٹر بینر جی کی یہ پہلی فلم تھی۔

وہ بتاتے ہیں ’میں فاروق شیخ سے کافی جلتا تھا کیونکہ ان کی اردو بہت ہی زیادہ عمدہ تھی۔ میں ایک طرف اس قدر نروس تھا تو دوسری طرف وہ اتنے ہی كنفيڈینٹ تھے۔ وہ سمارٹ لکنگ تھے اور بے حد نرم انداز میں گفتگو کرتے تھے۔ اس وقت میں صرف یہی کہوں گا کہ میرے دل میں ان کے لیے اور ان کے خاندان کے لیے دعائيں ہیں۔ میری آنے والی فلم ’دی باسٹرڈ چائلڈ‘ میں ہم دونوں اکھٹے ساتھ کام کر رہے تھے۔ وہ انتہائی ذہین انسان تھے۔‘

فاروق شیخ نے ’گرم ہوا‘، ’میرے ساتھ چل‘، ’شطرنج کے کھلاڑی‘، ’گمن‘، ’نوری‘، ’امراؤ جان‘، ’چشمہ بددور‘، ’ساتھ ساتھ‘، ’بازار‘، ’کسی سے نہ کہنا‘، ’رنگ برنگی‘، ’سلمی‘، ’فاصلے‘، ’کھیل محبت کا‘، ’گھر والی باہر والي‘، ’بیوی ہو تو ایسی‘، ’طوفان‘، ’مایا میم صاحب‘ اور ’محبت‘ جیسی فلموں میں اہم کردار ادا کیے۔

وہ اسی سال آنے والی فلم ’یہ جوانی ہے دیوانی‘ اور گذشتہ سال آنے والی فلم ’شنگھائی‘ میں بھی نظر آئے تھے۔

اسی بارے میں