ہالی وڈ کی فلم ’بیک ٹو فیوچر‘ لندن کے سٹیج پر

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اس فلم نے بین الاقوامی شہرت حاصل کی تھی

ہالی وڈ کی مشہور فلمی سلسلے ’بیک ٹو فیوچر‘ کا سٹیج ڈرامہ لندن کے ویسٹ اینڈ میں پہلی مرتبہ سنہ دو ہزار پندرہ میں پیش کیا جائے گا۔

رابرٹ زمیکیز جنہوں نے اس فلمی سلسلے کی کہانی اور پروڈکشن سنہ انیس سو پچاسی میں باب گیل کے ساتھ مشترکہ طور پر کی تھی ایک مرتبہ پھر اس سلسلے کو سٹیج کی شکل دیں گے۔

اس فلم میں مارٹی میکفلائی (فوکس) ماضی میں سفر کرکے سنہ انیس سو پچپن میں پہنچ جاتے ہیں جب ان کے والدین ہائی سکول کے زمانے میں ایک دوسرے میں دلچسپی لینا شروع کررہے ہوتے ہیں۔

اس مزاحیہ اور اڈونچر فلم جس میں کرسٹوفر لائڈ بھی اداکاری کے جوہر دکھاتے نظر آئے تھے زمیکیز کے لیے ایک بڑی کامیابی ثابت ہوئی تھی اور اس فلم کئی قسطیں بنائی گئی تھیں۔

فوکس مارٹی میکفلائی اس فلم میں مرکزی کردار ادا کرنے کے بعد ایک بین الاقوامی شہرت یافتہ ادارکار بن گئے تھے۔

اس فلم کی موسقی ترتیب دینے والے ایلن سلوستری نے بعد میں زمیکسی کی کئی فلمیں کئیں جن میں ’رومینسنگ دی سٹون‘، فورسٹ گمپ اینڈ کاسٹ اوے‘ شامل تھیں اس ڈرامے کی موسقی گیلن بلارڈ کے ساتھ مل کر بنائیں گے۔

بلارڈ نے چھ مرتبہ گرامی ایوارڈ حاصل کیا ہے اور کئی فلموں اور ڈراموں کی موسیقی بنا چکے ہیں۔

اسی بارے میں