غیور اختر لاہور میں انتقال کرگئے

تصویر کے کاپی رائٹ FaceBook
Image caption بہترین اداکاری پر غیور اختر کو صدارتی تمغۂ حسنِ کارکردگی بھی ملا تھا

پاکستان میں ٹیلی ویژن کے مشہور اداکار غیور اختر طویل علالت کے بعد لاہور میں انتقال کر گئے ہیں۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق 79 سالہ غیور اختر تین برس قبل فالج کا شکار ہوئے تھے اور تب سے علیل تھے۔

اطلاعات کی مطابق جمعرات کی رات طبیعت زیادہ خراب ہونے پر انھیں ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ چل بسے۔

غیور اختر نے1970 کی دہائی میں ریڈیو پاکستان سے اپنا فنی سفر شروع کیا تھا اور پھر انھوں نے ٹی وی اور فلموں میں بھی کام کیا۔

انھیں اصل شہرت 1980 کی دہائی میں پاکستان ٹیلی ویژن کے مشہور ڈرامے ’سونا چاندی‘ سے ملی۔

غیور کو ان کی مزاحیہ اداکاری کے لیے پسند کیا جاتا تھا اور ان کے دیگر اہم ڈراموں میں خواجہ اینڈ سنز بھی شامل ہے۔

ان کی بہترین اداکاری پر انھیں صدارتی تمغۂ حسنِ کارکردگی بھی دیا گیا تھا۔

انھوں نے پسماندگان میں بیوہ اور دو بیٹوں کو سوگوار چھوڑا ہے۔

اسی بارے میں