ہم ایوارڈز: ’زندگی گلزار ہے‘ کے آٹھ ایوارڈز

Image caption پاکستان میں ’لکس سٹائل‘ ایوارڈذ کے بعد ان ایوارڈز کا سلسلہ گذشتہ سال شروع کیا گیا ہے جسے شو بز سے وابستہ افراد نے بہت سراہا ہے

پاکستان کے نجی ٹی وی چینل ’ہم‘ کی دوسری سالانہ ایوارڈز تقریب میں ڈراما ’زندگی گلزار ہے‘نے آٹھ ایوارڈز جیت لیے۔

اس ڈرامے نے پاپولر چوائس کے چاروں ایوارڈز اپنے نام کیے جن میں بہترین ڈراما سیریل، بہترین اداکارہ (صنم سعید) اور ادا کار (فواد خان) اور بہترین سکرین جوڑی کا ایوارڈ شامل ہے جب کہ جیوری ایوارڈز میں اس نے بہترین مصنف (عمیرہ احمد)، بہترین ہدایت کارہ (سلطانہ صدیقی )، بہترین ڈرامہ سیریل اور بہترین جوڑی (فواد خان اور صنم سعید) کےایوارڈز اپنے نام کیے۔

یہ ڈراما اب عربی زبان میں ڈب کیا جا رہا ہے جو جلد ہی بیرون ممالک کےعربی چینلز پر پیش کیا جائے گا۔

اس سے پہلے ’ہم ٹی وی‘ کا ایک اور مقبول ڈرامہ سیریل ’ہم سفر‘ بھی عربی میں ڈب ہوکر سعودی عرب کے ایک چینل پر پیش کیا جا رہا ہے۔

جیوری کے فیصلے کے مطابق بہترین اداکارہ کا ایوارڈ ثانیہ سعید کو ڈراما ’اسیر زادی‘ کے لیے دیا گیا جب کہ بہترین اداکار کا ایوارڈ نعمان اعجاز کو ڈراما ’رہائی‘ کے لیے ملا۔

اداکارہ صنم جنگ کو بہترین نئی اداکارہ کا ایوارڈ ڈراما ’دلِ مضطر‘ کے لیے دیا گیا۔

ہم ایوارڈز کی جانب سے اس موقع پر ضیاء محی الدین کو لائف ٹائم اچیومینٹ ایوارڈ اور بشریٰ انصاری کو ریکگنیشن ایواڈ دیاگیا جب کہ

پاکستانی فلموں کےدوبارہ احیاء کی کاوشوں پر فلم ’میں ہوں شاہد آفریدی‘ اور فلم ’وار‘ کے پروڈیوسرز کو بھی خصوصی ایوارڈ دیےگئے۔

تقریب کی میزبانی کے فرائض واسع چوہدری، صنم جنگ، میکائل ذوالفقار، صنم سعید اور فہد مصطفیٰ نے انجام دیے۔

اس تقریب کے آغاز ہی میں بشرٰی انصاری اور جاوید شیخ نے رقص نے محفل میں رنگ بھر دیا جسے حاظرین نے بہت سراہا تاہم اس بعد پیش کی جانے والی دیگر پرفارمنس کا معیار بہت ہی سطحی تھا۔

احسن خان، مہوش حیات، شہروز سبزواری، سوہائے علی ابڑو اور نور نے بالی وڈ کے مختلف گانوں پر رقص پیش کیے جنھیں سوائے عام درجے کی نقالی کے کچھ نہیں کہا جاسکتا۔

پاکستان میں ’لکس سٹائل‘ ایوارڈذ کے بعد ان ایوارڈز کا سلسلہ گذشتہ سال شروع کیا گیا ہے جسے شو بز سے وابستہ افراد نے بہت سراہا ہے ۔

اسی بارے میں