بھائیوں کے خلاف دلیپ کمار عدالت میں

کرینہ کپور اور ودیا بالن
Image caption کرینہ کا کہنا ہے کہ اتنا بولڈ کردار ادا کرنے کی ہمت ان میں نہیں ہے

فلم’دی ڈرٹي پکچر‘ نے ودیا بالن کے کریئر کو ایک نیا موڑ دیا تھا لیکن کرینہ کپور کا خیال ہے کہ وہ ایسی فلم کبھی نہیں کر پائیں گی۔

کرینہ کا کہنا تھا ’ایسا بولڈ کردار ادا کرنے کے لیے جو ہمت چاہیے، وہ مجھ میں نہیں ہے، مجھے نہیں لگتا کہ میں کبھی ایسی فلم کر سکوں گی۔‘

لیکن کرینہ نے اپنے کریئر کی ابتدا میں فلم چمبیلی کی تھی اس میں ان کا کردار ایک جسم فروش لڑکی کا تھا۔

اس کی وجہ بتاتے ہوئے کرینہ نے کہا: ’اس وقت میں نئی تھی مجھے اپنے آپ کو ثابت کرنا تھا، لیکن اب مجھے کچھ ثابت کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔‘

فی الحال کرینہ کپور ’سنگھم ریٹرن‘ کی شوٹنگ میں مصروف ہیں۔

بھائیوں کے خلاف دلیپ کمار عدالت میں

تصویر کے کاپی رائٹ Hoture Images
Image caption دلیپ کمار نے یہ حلف نامہ اپنی بیوی سائرہ بانو کے ذریعہ داخل کیا ہے

اداکار دلیپ کمار جائیداد کے جھگڑے پر اپنے دو بھائیوں کے خلاف عدالت چلے گئے ہیں۔

ایک انگریزی اخبار کے مطابق دلیپ کمار کے دو بھائیوں 82 سالہ احسان اور80 سالہ اسلم نے دعوٰی کیا ہے کہ دلیپ کمار نے ان دونوں کو 1200 مربع فٹ اور 800 مربع فٹ کے دو فلیٹ دینے کا معاہدہ کیا تھا۔

لیکن اب دلیپ کمار نے اپنی بیوی سائرہ بانو کے ذریعے کورٹ میں دائر کردہ حلف نامے میں کہا ہے کہ ان کے پاس بھائیوں کو دینے کے لیے مکان یا پیسے نہیں ہیں۔

حلف نامے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ دلیپ کمار نے بھائیوں کے ساتھ یہ وعدہ ’انسانی بنیاد‘ پر کیا تھا، لیکن دونوں اس کا غلط فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

دلیپ کمار نے اپنے حلف نامے میں دعوٰی کیا ہے کہ وہ جس بنگلے میں بیوی اور بھائیوں کے ساتھ رہائش پذیر تھے، وہ انھوں نے خود 1953 میں اپنی کمائی سے خریدا تھا۔

اسی بارے میں