’ٹرانسفارمرز‘ کے پروڈیوسرز پر مقدمے کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption پیرا ماؤنٹ پکچرز نے فوری طور پر اس بیان میں پر کوئی تبصرہ نہیں کیا

چین کے سرکاری میڈیا کے مطابق ایک چینی سیاحتی کمپنی نے کہا ہے کہ وہ معاہدے کی خلاف ورزی کرنے پر ہالی وڈ کی فلم ’ٹرانسفارمرز‘ کے پروڈیوسروں کے خلاف قانونی چارہ جوئی کریں گے۔

چونگ چیانگ وولونگ کارسٹ کارسٹ ٹورزم کمپنی لمیٹڈ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ٹرانسفارمرز کے پروڈیوسروں نے وعدے کے مطابق ان کی کمپنی کے لوگو کو فلم میں واضح انداز میں نہیں دکھایا گیا۔

انھوں نے کہا کہ وہ پیرا ماؤنٹ پکچرز اور ان کے ایک چینی شراکت دار کے خلاف کیس کریں گے۔

پیرا ماؤنٹ پکچرز نے فوری طور پر اس بیان میں پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔

جس چینی کمپنی کے خلاف کیس کیا جا رہا ہے وہ بیجنگ میں قائم 1905 انٹرنیٹ ٹیکنالوجی کمپنی ہے۔ اس نے اپنی ویب سائٹ پر ایک بیان میں کہا ہے کہ چونگ چیانگ وولونگ کارسٹ نے انھیں وقت پر ادائیگی نہیں کی تھی۔

چونگ چیانگ وولونگ کارسٹ نے کہا کہ وہ غیر متعین نقصان کے لیے ان کمپنیوں کے خلاف مقدمہ کرنے والے ہیں۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ ’ٹرانسفارمرز: ایج آف اکسٹنشن‘ میں دکھائے جانے والے مناظر کے بارے میں ناظرین کو واضح طور پر معلوم نہیں ہو پایا کہ یہ مناظر چونگ چیانگ وولونگ کے تھے کیونکہ انھیں ہانگ کانگ کے مناظر کے ساتھ ملا دیا گیا تھا۔

کمپنی کا مزید کہنا ہے کہ دوسری سیاحتی کمپنیاں یہ دعویٰ کر رہی ہیں کہ فلم میں دکھائی دینے والی چوٹیاں ان کے سیاحتی مقام ہیں۔

گذشتہ مہینے بیجنگ میں جائیداد کا کاروبار کرنے والی ایک کمپنی نے کہا تھا کہ اس نے پیرا ماؤنٹ پکچرز اور ان کے دو چینی شراکت داروں کے خلاف اس لیے مقدمہ دائر کیا تھا کہ اس فلم کے ٹریلر اور پوسٹروں میں وعدے کے مطابق ان کے ہوٹل کی تصاویر نہیں دکھائی گئیں اور وہ ان کے ہوٹل میں فلم کا پریمیئر منعقد کرنے کے وعدے سے بھی مکر گئے۔

اس کے بعد جلد ہی پیرا ماؤنٹ پکچرز اور چینی کاروباری کمپنی نے کہا تھا کہ ان کے درمیان تنازع حل ہو گیا ہے۔