’بھائی میرے والد کا کوٹ تو لوٹا دو؟‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کوٹ کے بارے میں اوم پوری کو بھی اب کچھ یاد نہیں ہے

بھارتی اداکار انوپم کھیر کے ٹی وی شو پر جب اوم پوری آئے تو انوپم کھیر نے ان سے ایک کوٹ واپس کرنے کا کہا۔

معلوم ہوا ہے کہ 65 روپے کا یہ کوٹ انوپم کھیر نے اوم پوری کو دیا تھا۔

اصل میں اوم پوری شملہ میں ایک ڈرامہ کے لیے گئے تھے جہاں ڈرامہ شروع ہونے سے پہلے ان کا کوٹ غائب ہو گیا۔

اس وقت انوپم کھیر نے اوم پوری کو ایک کوٹ دے کر مدد کی جو اوم پوری نے اب تک لوٹايا نہیں ہے۔

اسی کوٹ کا ذکر جب شو میں ہوا تو انوپم کھیر نے کہا بھائی میرے والد جی کا کوٹ تو لوٹا دو؟

یہ کوٹ انوپم کھیر کے چچا کا تھا جو انھوں نے اپنی شادی پر پہنا تھا اور پھر اسے انوپم کے والد کو دے دیا۔

لیکن 65 روپے کا وہ کوٹ کہاں گیا اس کے بارے میں اوم پوری کو بھی اب کچھ یاد نہیں ہے۔

کون لکھے گا نواب پٹودی کی کہانی

تصویر کے کاپی رائٹ bbc
Image caption سیف اپنے والد پر بننے والی اس فلم کے لیے آج کل مصنف کی تلاش میں ہیں

کافی وقت سے منصور علی خاں پٹودی کی زندگی پر فلم بنانے کی باتیں ہو رہی ہیں اور اس فلم کو بنانے کے لیے ان کے بیٹے سیف علی خان کافی دلچپسی لے رہے ہیں۔

تاہم اس میں پریشانی اس بات کی ہے کہ جس دور میں پٹودی کھیلتے تھے اس وقت کے کرکٹ کے تمام ریکارڈ حاصل کرنا مشکل ہے۔

ریکارڈز حاصل کرنے کے بعد انھیں فلم کی شکل دینا بھی ایک چیلنج ہے۔

اطلاعات کے مطابق سیف اپنے والد پر بننے والی اس فلم کے لیے آج کل مصنف کی تلاش میں ہیں۔

اسی بارے میں