اندرا گاندھی کے قتل پر بنی فلم پر تنازع

اندرا گاندھی تصویر کے کاپی رائٹ PIB
Image caption اندرا گاندھی کو ان کے محافظوں نے قتل کر دیا ہے

بھارت کی سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کے قتل پر بنائی گئی پنجابی فلم ’قوم دے ہیرے‘ بھارت میں ریلیز ہونے سے پہلے ہی تنازعات میں گھر گئی ہے۔

محترمہ گاندھی کی جماعت کانگریس پارٹی نے وزیراعظم کو خط لکھ کر درخواست کی ہے کہ اس فلم پر پابندی عائد کی جانی چاہیے کیونکہ اس فلم میں اندرا گاندھی کے قاتلوں کو ہیرو کے طور پر دکھایا گیا ہے۔

انٹیلی جنس ایجنسیوں نے خبردار کیا ہے کہ اگر فلم ریلیز ہوئی تو اس سے تشدد پھیلنے کا اندیشہ ہے۔

محترمہ گاندھی کے محافظوں نے ہی انھیں قتل کر دیا تھا کیونکہ انھوں نے سکھوں کے مقدس مقام گولڈن ٹیمپل میں شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کے لیے فوج بھیجی تھی۔

سکھوں کا کہنا ہے کہ اس کارروائی میں ہزاروں سکھ ہلاک ہوئے تھے۔

اندرا گاندھی کے قتل کے بعد ملک بھر میں سکھ مخالف فسادات میں تین ہزار سے زیادہ سکھ ہلاک ہوئے تھے۔

یہ فلم سابق وزیر اعظم اندرا گاندھي کو قتل کرنے والے ان کے محافظ بےانت سنگھ اور ستونت سنگھ پر بنائی گئی ہے۔

بے انت سنگھ کو اندرا گاندھی کے قتل کے وقت ہی گولی مار دی گئی تھی جبکہ ستونت سنگھ کو پھانسی پر لٹکایا گیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اندرا گاندھی کے قتل کے بعد ملک میں سکھ مخالف فسادات پھوٹ پڑے تھے

ڈائریکٹر رویندر روی کا کہنا ہے کہ انھوں نے اندرا گاندھی کے قتل کی تحقیقات کرنے والے ٹھاكر کمیشن کی رپورٹ اور عدالتی کارروائی کے ساتھ ساتھ بےانت سنگھ اور ستونت سنگھ کے خاندانوں کے ساتھ طویل ملاقاتوں کے بعد یہ فلم بنائی ہے۔

یہ فلم بھارت میں 22 اگست کو ریلیز ہونی ہے جب کہ بیرون ملک یہ پہلے ہی ریلیز ہو چکی ہے۔ بھارت میں بنائی جانے والی پنجابی فلمیں ملک کے علاوہ شمالی امریکہ، یورپ اور آسٹریلیا میں بھی ریلیز ہوتی ہیں۔

اتوار کو دلی میں وزارت داخلہ اور انٹیلی جنس بیورو کے افسران کو فلم دکھانے کے بعد فلم کے پروڈیوسر اور تقسیم کار اگلی ہدایات کا انتظار کر رہے ہیں۔

فلم میں بےانت سنگھ کے کردار ادا کرنے والے راج كاكڑا کا کہنا ہے کہ جب سینسر بورڈ نے فلم پاس کر دی ہے تو پھر اس پر سوال اٹھانا ٹھیک نہیں ہے۔

بےانت سنگھ کے 35 سال کے بیٹے سربجیت سنگھ نے فون پر بتایا کہ فلم حقیقی واقعات پر مبنی ہے اور یہ سکھوں کی تاریخ ہے۔

گذشتہ سال ’ساڈا حق‘ نامی فلم پنجاب کے سابق وزیر اعلیٰ بےانت سنگھ کے قتل اور اس کے بعد سزا یافتہ قاتلوں کے جیل توڑ کر فرار ہونے کی کہانی پر بنائی گئی تھی۔