امیتابھ کو یاد آئے کولکتہ کے بیروزگاری کے دن

تصویر کے کاپی رائٹ Amitabh Bacchan Facebook Page
Image caption امیتابھ بچن بمبئی کی فلم نگری میں قدم رکھنے سے قبل کولکتہ میں کام کی تلاش کے لیے گئے تھے

جب بالی وڈ کے سپر سٹار امیتابھ بچن بنگال کے تاریخی شہر کولکتہ میں اپنی فلم ’پيكو‘ کی شوٹنگ کے لیے پہنچے تو ان کی کچھ پرانی یادیں تازہ ہو گئیں۔

امیتابھ نے گذشتہ ہفتے کولکتہ کی گلیوں میں سائیکل چلاتے ہوئے فلم ’پيكو‘ کی شوٹنگ کی اور کچھ تصاویر بھی اپنے مداحوں کے ساتھ شیئر کیں۔

ایک وقت وہ بھی تھا کہ امیتابھ برسات کے موسم میں پانی سے بھری انھی گلیوں میں نوکری کی تلاش میں سرگرداں رہا کرتے تھے۔

بگ بی نے اپنے فیس بک پر لکھا: ’کولکتہ کی اہم گلیوں میں سائیکل چلانا، کیمرے اور لوگوں کو فالو کرنا، وقت کا کیسا چکر ہے، کبھی اسی جگہ نوکری کے لیے کھڑے رہتے تھے۔‘

فلم کی شوٹنگ کے لیے کولکتہ پہنچتے ہی بگ بی نے ٹویٹ کیا: ’اس شہر میں آنے کے بعد اس کی بہت ساری یادیں ابھر رہی ہیں لیکن آنے والے دنوں میں بہت کچھ ہونے والا ہے۔ کولکتہ ایک خاص قسم کا شہر ہے جو علم اور جنون کے ساتھ آپ کی حوصلہ افزائی کرتا ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Amitabh Bacchan Facebook Page
Image caption امیتابھ فلم پیکو کی شوٹنگ کے لیے گذشتہ دنوں کولکتہ میں تھے

اپنی پرانی یادوں کو تازہ کرتے ہوئے بگ بی نے لکھا: ’رائٹرز بلڈنگ، گورنمنٹ ہاؤس، میدان، ٹرام سروسز، وکٹوریہ میموریل، چورنگي۔۔۔ اوہ۔۔۔ ایسی تازہ یادیں۔۔۔ اور 1962 کا وہ سال۔۔۔ جب کولکتہ ملک میں سب سے زیادہ چہل پہل والا شہر ہوا کرتا تھا۔‘

انھوں نےمزید لکھا: ’کیا وقت تھا۔۔۔ پارک سٹریٹ کلچر، ریستوراں، بار، كنفیكشنر، ڈنر اور ڈانس فلور کا ایک رنگ برنگا مرکب تھا۔ سب ایک کے بعد ایک لائن میں تھے۔ یہاں گزاری ہر شام مجھے یاد ہے۔ بلیو فوکس، موگیمبو، مولن روز، وپرو، والڈورف وکٹوریہ میموریل کا پچكا، نظام کے کباب۔‘

امیتابھ نے بتایا ہے کہ اس وقت وہ چورنگي، ٹولي گنج سے لے کر بالي گنج، علی پور، نیو علی پور، رسل سٹریٹ پر رہ چکے ہیں۔ وہ محض 300 روپے ماہانہ پر پیئنگ گیسٹ کے طور پر وہاں رہتے تھے۔

اسی بارے میں