جیکی چن کے بیٹے کو منشیات کے الزام میں جیل

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption جیسی چن کو چھ ماہ قید کے علاوہ تین سو بائیس ڈالر جرمانہ بھی کیا گیا ہے

معروف اداکار جیکی چن کے بیٹے جیسی چن کو منشیات کے استعمال کے الزام میں چھ ماہ قید کی سزا سنائی گئی ہے۔

بیجنگ کی ڈسٹرکٹ عدالت نے 32 سالہ جیسی چن کو دوسروں کو منشیات کے استعمال میں مدد دینے کے الزام میں قصور وار ٹھہراتے ہوئے سزا سنائی۔

گذشتہ سال اگست میں جیسی چن کو چین کے دارالحکومت بیجنگ سے ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا تھا اور ان کے گھر سے ایک سو گرام منشیات برآمد ہوئی تھیں۔

جیسی کے ساتھ 23 سالہ تائیوان کے فلم سٹار کائی کو کو بھی گرفتار کیا گیا تھا اور پولیس کے مطابق دونوں نے گانجا پی رکھا تھا۔

کائی کو 14 دن کی حراست کے بعد رہا کر دیا گیا تھا لیکن جیسی چن کو زیادہ سنگین جرم کا سامنا تھا جس میں دوسروں کو منشیات فراہم کرنا اور انھیں منشیات استعمال کرنے کے لیے جگہ فراہم کرنے کا الزم شامل ہے۔

جمعے کو اس مقدمے کی سماعت کے دوران جیسی چن نے عدالت کو بتایا ہے کہ پولیس ان کے گھر آئی تو انھیں معلومات فراہم کیں اور اعتراف جرم کیا کیونکہ انھیں گانجا کے استعمال کے بارے میں معلوم نہیں تھا۔

جیسی چن کو چھ ماہ قید کے علاوہ تین سو بائیس ڈالر جرمانہ بھی کیا گیا ہے۔

جیسی چن کی گرفتاری چین میں منشیات کے خلاف کریک ڈاؤن کے نتیجے میں آئی جس میں کئی مشہور شخصیات کو ٹارگٹ کیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption جیکی چن نے بیٹے کی گرفتاری پر شرمندگی کا اظہار کیا تھا

جیکی چن نے اپنے بیٹے کی گرفتاری پر معافی مانگتے ہوئے ’شرمندگی‘ اور ’دکھ‘ کا اظہار کیا تھا۔

جیلکی چن کو سنہ 2009 میں بیجنگ کی پولیس نے ’نارکوٹکس کنٹرول امبیسیڈر‘ یعنی منشیات کے استعال کے خلاف مہم کا سفیر مقرر دیا تھا۔

اس وقت جیکی چن نے اپنی ویب سائٹ ’سینا وائبو‘ پر لکھا تھا کہ ان کو اس بات پر ’غصہ آیا اور صدمہ ہوا۔‘

انھوں نے مزید کہا ’ایک باپ ہونے کے ناتے مجھے بہت افسوس ہوا ہے اور یہ خبر سن کر جیسی کی ماں کا دل ٹوٹا ہے۔‘

جیکی چن نے کہا ’مجھے امید ہے کہ آج کے نوجوان اس حادثے سے سبق حاصل کریں گے اور منشیات کے استعمال سے گریز کریں گے۔‘

اسی بارے میں