پاکستانی ویب سائٹس کو عامر خان کا قانونی نوٹس

تصویر کے کاپی رائٹ SPICE
Image caption عامر خان سماجی مسئلوں کے معاملے میں بہت فعال رہتے ہیں

بالی وڈ سٹار عامر خان نے چند پاکستانی ویب سائٹوں کو مبینہ طور پر ان کا ’جھوٹا انٹرویو‘ چلانے کے لیے قانونی نوٹس بھیجا ہے۔

عامر خان کی پی آر ٹیم نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی ہے تاہم عامر کی ٹیم نے پاکستانی ویب سائٹوں کا نام بتانے سے انکار کر دیا ہے۔

عامر کی ٹیم نے کہا: ’ہم ان کے نام ظاہر کر کے انھیں بلاوجہ کی پبلسٹی دینا نہیں چاہتے۔‘

عامر خان کے مطابق مذہب اور اسلام کے نام پر ان ویب سائٹوں پر مبینہ طور پر ان کے نام سے ’جھوٹے انٹرویو‘ چلائے گئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption فلم پی کے میں عامر خان کے ساتھ انوشکا شرما ہیں اور اس کی ہدایت راجکمار ہیرانی نے دی ہے

انھوں نے کہا کہ انھوں نے کسی پاکستانی ویب سائٹ کو کوئی انٹرویو نہیں دیا ہے۔

عامر خان کے قانونی مشیروں کی ٹیم نے بتایا کہ ان کی فلم ’پی کے‘ کے سلسلے میں ان ویب سائٹوں پر چلائے جانے والے تمام انٹرویوز جھوٹے اور فرضی ہیں۔

ان کے مطابق عامر خان کے علم میں جیسے ہی یہ باتیں آئيں انھوں نے اس میں شامل پاکستانی ویب سائٹوں کو نوٹس بھیجا۔

یاد رہے کہ فلم ’پی کے‘ کے پوسٹر کے بعد سے اس فلم کو مختلف معاملے میں مخالفت کا سامنا ہے جس میں مذہب کی تضحیک کرنے کا بھی الزام ہے۔

ہندوؤں کی مذہبی تنظیموں کی جانب سے اس فلم کی زبردست مخالفت کی گئی تھی۔

اسی بارے میں