کرسٹین سیزر ایوارڈ حاصل کرنے والی پہلی امریکی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سٹیورٹ نے کہا فرانس میں لوگ جس قسم کی فلم بناتے ہیں وہ ہالی وڈ میں بنائی جانے والی فلموں سے بہت مختلف ہوتی ہیں اور میں یہاں کی فلم کو ترجیح دیتی ہوں

کرسٹین سٹیورٹ وہ پہلی امریکی اداکارہ بن گئی ہیں جنھوں نے فرانس کا باوقار سیزر ایوراڈ حاصل کیا ہے۔

واضح رہے کہ سیزر ایوارڈ فرانس میں آسکر ایوارڈ کا ہم پلہ تصور کیا جاتا ہے۔

انھیں فلم ’کلاؤڈس آف سلز ماریا‘ میں ان کی اداکاری پر بہترین معاون اداکارہ کا ایوارڈ دیا گیا ہے۔

سیزر ایوارڈز کی شام فلم ’ٹمبکٹو‘ کے نام رہی کیونکہ اس فلم کو بہترین فلم کے ساتھ سات ایوارڈز ملے اور ان میں بہترین ہدایت کار کا ایوراڈ بھی شامل تھا۔

اس فلم میں شمالی مالی کو پیش کیا گیا ہے جو اسلامی جنگجوؤں کے زیر اقتدار ہے۔

واضح رہے کہ یہ فلم آئندہ اتوار کو منعقد ہونے والی آسکر تقریب میں بہترین غیرملکی فلم کے زمرے میں نامزد ہے۔

امریکی اداکارہ سٹیورٹ نے ایوارڈ قبول کرتے ہوئے فرانسیسی میں کہا ’مجھے تم سے محبت ہے جولیئٹ۔‘

واضح رہے کہ جولیئٹ بنوشے فلم میں ان کی ساتھی اداکارہ ہیں۔ اس کے بعد انھوں نے فرانسیسی فلم سازوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption قیصر ایوارڈز کی شام فلم ’ٹمبکٹو‘ کے نام رہی کیونکہ اس فلم کو بہترین فلم کے ساتھ سات ایوارڈز ملے

انھوں نے ورائٹی میگزن سے بات کرتے ہوئے کہا: ’فرانس میں لوگ جس قسم کی فلم بناتے ہیں وہ ہالی وڈ میں بنائی جانے والی فلموں سے بہت مختلف ہوتی ہیں اور میں یہاں کی فلم کو ترجیح دیتی ہوں۔‘

اس ایوارڈ تقریب میں ایک دوسرے امریکی اداکار کو بھی اعزاز سے نوازا گیا۔

امریکی اداکار شان پین کو فلموں میں ان کی گرانقدر خدمات کے اعتراف میں ’لائف ٹائم اچیومنٹ‘ ایوارڈ سے نوازا گیا۔

ایوارڈ حاصل کرنے کے موقعے پر تیار کیے گئے اپنے خطاب میں ’ٹمبکٹو‘ کے ڈائرکٹر عبد الرحمن سیساکو نے گذشتہ اسلام پسند کی جانب سے ہونے والے تباہ کن حملے کے پیش نظر فرانس کو ایک ’شاندار ملک‘ کے طور پر یاد کیا۔

انھوں نے کہا: ’یہاں تہذیب کا کوئی تصادم نہیں ہے۔ یہاں تہذیب کا سنگم ہے۔‘

اسی بارے میں