آسکر میں ہیرو اور ہیروئنوں کی فیس میں تفریق پر آواز بلند

Image caption بالی وڈ میں اگر اداکاروں میں سلمان کو سب سے زیادہ پیسے ملتے ہیں تو اداکاراؤں میں دیپیکا سب سے آگے ہیں

آسكرز کے اعزازات حاصل کرنے والے اداکار اور اداکارائیں اکثرو بیشتر بحث کا موضوع رہتے ہیں۔

اس بار معاون اداکارہ کے لیے بہترین ایوارڈ حاصل کرنے والی پیٹریشيا آرکیٹ نے ایک حساس مسئلہ اٹھا کر ہالی وڈ میں ہیرو اور ہیروئنوں کی اجرت پر بحث کو نیا موڑ دے دیا ہے۔

آسکر انعام حاصل کرتے ہوئے پیٹریشيا نے ہالی وڈ میں اداکاراؤں کو کم محنتانہ ملنے کا مسئلہ اٹھایا۔

انھوں نے کہا: ’یہ ایوارڈ ہر اس عورت کے لیے ہے جس نے جنم دیا، ہر اس انسان کے لیے جس نے ٹیکس دیا اور امریکہ کے ہر ایک شہری کے لیے ہے۔ ہم سب نے دوسروں کے حقوق کے لیے جنگ لڑی ہے اب وقت آ گیا ہے کہ ہم خواتین کو مردوں کے برابر محنتانہ ملے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پیٹریشیا نے اعزاز لیتے ہوئے مساوات کی بات کہی

ہالی وڈ کی طرح بالی وڈ میں بھی اس قسم کا عدم مساوات ہے۔

فلم ناقد اور باکس آفس ٹرینڈ تجزیہ نگار کومل نہاٹا نے بالی ووڈ کے اس فرق کے اعدادو شمار پیش کیے۔

ان کے مطابق جہاں شاہ رخ خان کو 55-60 کروڑ روپے ملتے ہیں وہیں ٹاپ اداکارہ دیپکا پڈوکون 6-7 کروڑ

اگر سلمان خان کو ایک فلم کے لیے 65-70 کروڑ روپے ملتے ہیں تو کرینہ کپور کو محض 5-6 کروڑ۔

عامر خان کو بھی 55-60 کروڑ روپے کے درمیان رقم ملتی ہے جبکہ قطرینہ کیف کو 5-6 کروڑ فی فلم اجرت ملتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ SONY TV
Image caption بالی وڈ میں کئی دہائیوں تک ہیرو کو کام ملتا ہے جبکہ ہیروئنوں کا کریئر نسبتا مختصر ہوتا ہے

رنبیر کپور 20-25 کروڑ روپے کے درمیان ہیں تو پرینکا چوپڑہ 5-5.50 کروڑ میں ہیں۔

رنویر سنگھ کو اگر 14 -15 روپے کروڑ ملتے ہیں تو سوناکشی سنہا کو 2.30-3 کروڑ ہی ملتے ہیں۔

اس کے علاوہ ان کے کام کرنے کی مدت بھی کم ہوتی ہے اور ان کا کریئر بھی تقریباً سات سے آٹھ سال کا ہوتا ہے۔

بالی وڈ میں ہیرو فلم کی اداکاراؤں سے 10 گنا زیادہ تو کماتے ہی ہیں وہ کئی دہائیوں تک فلم میں اپنا سکہ جمائے رہنے میں بھی کامیاب رہتے ہیں۔

اسی بارے میں