شاہ رخ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی سفارش

شاہ رخ خان تصویر کے کاپی رائٹ colors
Image caption شاہ رخ خان آئی پی ایل ٹیم کولکتہ نائٹ رائیڈر کے مالک ہیں

مہاراشٹر بال کمیشن نے پولیس کو اداکار شاہ رخ خان کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کے لیے کہا ہے۔

یہ معاملہ تقریباً تین سال پرانا ہے، جب 16 مئی 2012 کو آئی پی ایل کرکٹ کے ایک مقابلے کے بعد وانكھیڑے اسٹیڈیم میں شاہ رخ خان کا سکیورٹی گارڈز کے ساتھ جھگڑا ہوا تھا اور انھوں نے مبینہ طور پر گالم گلوچ کی تھی۔

بال کمیشن نے بچوں کی موجودگی میں نازیبا زبان استعمال کرنے کے الزام میں شاہ رخ کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی سفارش کی ہے۔

جب یہ جھگڑا ہوا تھا اس موقع پر شاہ رخ خان کے بچے اور ان بچوں کے کچھ دوست بھی موجود تھے۔

اس وقت شاہ رخ خان کے ساتھ بالی میں ان کے کچھ دوست اور ان کے بچے بھی موجود تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اس واقعے کے بعد شاہ رخ پر پانچ سال کے لیے وانکھیڑے سٹیڈیم میں داخلے پر پابندی لگا دی گئی تھی

تاہم پولیس کی جانب سے اس پر اب تک کچھ نہیں کہا گیا ہے۔

ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن نے بچوں کے سامنے شاہ رخ خان پر وانكھیڑے اسٹیڈیم کے سیکورٹی کے ساتھ گالم گلوچ اور مارپیٹ کرنے کا الزام لگایا تھا۔

اس واقعے کے بعد ایسوسی ایشن نے شاہ رخ کے وانكھیڑے اسٹیڈیم میں داخلے پر پانچ سال کی پابندی لگا دی تھی۔

شاہ رخ خان آئی پی ایل کرکٹ ٹیم کولکتہ نائٹ رائیڈر کے مالک ہیں۔

اسی بارے میں