بالی وڈ اداکار دکانداروں اور پھیری والوں کے خلاف سڑکوں پر

تصویر کے کاپی رائٹ Maduhpal
Image caption اداکار رشی کپور کی قیادت میں پریم چوپڑا اور نیلم سمیت بہت سے فلمی ستارے اس فیصلے کے خلاف احتجاج کے لیے سڑک پراترے

ممبئی میں عالیشان پالی ہل کے علاقے میں بالی وڈ کی بہت سی معروف ہستیوں کے آشیانے ہیں اور ریاستی حکومت نے اس علاقے میں ہاکنگ زونز بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

ہاکنگ زون کے قیام کا مقصد یہاں کی سڑکوں پر چھوٹےدکانداروں اور پھیری والوں کو روزی روٹی کمانے کا موقع دینا ہے۔

لیکن بالی وڈ کی ان شخصیات کو یہ بات قطعی پسند نہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سے ان کی زندگی مشکل ہوجائے گی۔

حکومت کی اس مجوزہ ہاکنگ زونز کے خلاف فلمی ستاروں کےساتھ ساتھ یہاں رہنے والے لوگوں نے بھی احتجاج کیا۔

اداکار رشی کپور کی قیادت میں پریم چوپڑا اور نیلم سمیت بہت سے فلمی ستارے اس فیصلے کے خلاف احتجاج کے لیے سڑک پراترے۔

رشی کپور اور موسیقار وشال ددلاني کے ساتھ ساتھ پالی ہل کے بہت سے دیگر مقامی لوگ بھی اس احتجاجی مارچ میں شامل تھے۔

پالی ہل علاقے میں کپور خاندان تو رہتا ہی ہے، دلیپ کمار، سنجے دت، عمران ہاشمي، عمران خان اور گلزار جیسی فلمی ہستیوں کی رہائش گاہیں بھی یہیں ہیں۔

مشہور اداکارہ دیپکا پادوکون اور پریم چوپڑا بھی اسی علاقےمیں رہتے ہیں اور ان میں سے بہت سے لوگ بی ایم سی (بامبے میونسپل کارپوریشن) کے فیصلے سے ناراض ہیں۔

اداکار رشی کپور کہتے ہیں ’یہاں ہاكنگ زونز بننے سے ہم سبھی کو بہت سی مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ یہاں شام کے وقت بہت ٹریفک اور شور و غل ہوتا ہے۔ اتنی ساری عمارتوں کی وجہ سے یہاں پہلے ہی سے کافی بھیڑ بھاڑ ہے۔ ایسے میں ان کے آنے سے تکلیف بڑھ جائے گی۔‘

ان کا کہنا تھا کہ وہ ان پھیری والوں کے خلاف نہیں ہیں لیکن سنگاپور کی طرز پر ہاكرز مارکیٹ بنائی جائیں۔

رشی کپور کا کہنا ہے کہ ہاکنگ جونز صرف پالی ہل میں ہی کیوں؟ مالابار ہلز، نپين سی روڈ، والكیشور روڈ اور الٹموٹ روڈ پر بھی بنائے جانے چاہئیں۔

پریم چوپڑا نے کہا ’اس علاقے کو سیاحت کے لحاظ سے مثالی سمجھا جاتا ہے۔ میں مکمل طور پر اس پروجیکٹ کے خلاف ہوں۔ یہاں ہاكرز کے آنے سے یہ بھی ممبئی کے کسی دوسرے علاقےکی طرح ہی بن جائے گا۔‘

ہاکنگ زون بنانے کی تجویز

بی ایم سی کے افسران کا کہنا ہے کہ ٹریفک، پیدل مسافروں کی آمدورفت اور سڑکوں کے تفصیلی جائزے کے بعد ان علاقوں میں ہاکنگ زونز بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کہا جا رہا ہے کہ اس علاقے میں تقریباً 50 ہاکنگ زونز بنانے کی تجویز ہے۔

یہ زونز ٹرنر روڈ، پالی ہل روڈ، 14 ویں روڈ، 15 ویں روڈ، 27 ویں روڈ، 31 ویں روڈ، مینويل گونزالویس روڈ، ہل روڈ اور سینٹجان روڈ پر بنائے جانے کا منصوبہ ہے۔

اسی بارے میں