ہارپر لی کا نیا ناول ’گو سیٹ اے واچ مین‘ بازار میں آ گیا

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اس ناول کو دنیا کے 70 ممالک میں ایک ساتھ فروخت کے لیے پیش کیا گیا ہے

55 برس قبل ’ٹو کِل اے موکنگ برڈ‘ نامی ناول سے عالمی شہرت حاصل کرنے والی مصنفہ ہارپر لی کا نیا ناول منگل کو فروخت کے لیے پیش کر دیا گیا ہے۔

’گو سیٹ اے واچ مین‘ نامی یہ ناول مصنفہ کے پہلے مشہورِ زمانہ ناول کے 20 برس بعد پیش آنے والے واقعات کے بارے میں ہے اور اس میں 26 سالہ جین لوئیز کی کہانی ہے جو نیویارک سے اپنی آبائی ریاست ایلاباما واپس آتی ہے۔

ہارپر لی کا یہ ناول ہیری پوٹر سیریز کی آخری کتاب کے بعد ایمیزون پر اشاعت سے قبل سب سے زیادہ آرڈر کی جانے والی کتاب بن گئی ہے۔

اسے دنیا کے 70 ممالک میں ایک ساتھ فروخت کے لیے پیش کیا جا رہا ہے۔

آج کل ایلاباما کے ایک نرسنگ ہوم میں قیام پذیر 89 سالہ لی نے ’گو سیٹ اے واچ مین‘ 1957 میں لکھا تھا لیکن ان کے مدیر نے ان سے کہا تھا کہ وہ پہلے اسی ناول کے فلیش بیک پر مبنی ایک اور ناول لکھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption 89 سالہ ہارپر لی آج کل امریکی ریاست ایلاباما کے ایک نرسنگ ہوم میں قیام پذیر ہیں

اس طرح ’ٹو کِل اے موکنگ برڈ‘ وجود میں آئی جو اب ایک جدید کلاسیک کا درجہ لے چکی ہے۔ اسے 1961 میں معتبر امریکی ادبی انعام پیولٹزر ملا اور اس کے اب تک چار کروڑ سے زیادہ نسخے فروخت ہو چکے ہیں۔

اس پر 1962 میں بننے والی فلم کو بھی تین آسکر ایوارڈ ملے تھے اور اس میں وکیل ایٹیکس فنچ کا کردار ادا کرنے والے گریگری پیک کو بہترین اداکار کا اعزاز ملا تھا۔

رواں برس فروری میں اس بات کا اعلان کیا گیا تھا کہ ہارپر لی کا ’ٹو کِل اے موکنگ برڈ‘ سے پہلے لکھے جانے والا ایک ناول ملا ہے اور اسے اس دہائی کی ایک بڑی ادبی سنسنی کہا گیا تھا۔

جب نئی کتاب سامنے آئی تو لی نے فروری میں کہا تھا کہ ’میں بہت شکر گزار اور حیران ہوں کہ یہ کتاب اب اتنے برسوں کے بعد چھپ رہی ہے۔‘

اسی بارے میں