’سلمان خان کا میڈیا ٹرائل کیا جا رہا ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ spice
Image caption سلمان خان اس کیس میں ضمانت پر ہیں

ممبئی بم دھماکوں کے مجرم یعقوب میمن کی پھانسی اور سابق صدر عبدالکلام کے انتقال کے درمیان بالی وڈ کے سپر سٹار سلمان خان کے مشہور ہٹ اینڈ رن کیس کو میڈیا میں خاص جگہ نہیں ملی۔

لیکن جمعرات کو ممبئی ہائی کورٹ میں اس کیس کی سماعت ہوئی۔

سماعت میں سلمان خان تو موجود نہیں تھے لیکن عدالت میں ان کے وکیل امت دیسائی نے دلائل دیتے ہوئے ذرائع ابلاغ کے کردار پر سوالات اٹھائے۔

انھوں نے کہا کہ ’میڈیا سلمان کی ایک مختلف شبیہ بنانے کی کوشش کر رہا ہے اور اس طرح اس کیس میں ان کا میڈیا ٹرائل کیا جا رہا ہے۔‘

اس پر جسٹس اے آر جوشی نے میڈیا کو ہدایت دی کہ وہ صرف عدالتی کارروائی کی ہی رپورٹنگ کریں نہ کہ بیانات دیں۔‘

اس کے ساتھ ہی سلمان خان کے وکیل کی درخواست پر کیس کی سماعت کے دوران عدالت میں ویڈیو یا تصاویر کھینچنے پر پابندی عائد کر دی۔

ہٹ اینڈ رن کیس پر ذیلی عدالت کے فیصلے پر ہائی کورٹ کا بینچ سماعت کر رہا ہے۔

سماعت میں وکیل صفائی کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ واقعے کے وقت سلمان خان کی بجائے ان کے ڈراییور گاڑی چلا رہے تھے جبکہ ذیلی عدالت یہ تعین بھی نہیں کر پائی کہ واقعے کے وقت سلمان خان نے شراب پی رکھی تھی کہ نہیں۔

اسی بارے میں